کشمیری رہنماؤں کی رہائی کیلئے ہارورڈ یونیورسٹی کے طلبہ کامودی کو خط

    کشمیری رہنماؤں کی رہائی کیلئے ہارورڈ یونیورسٹی کے طلبہ کامودی کو خط

  

لندن(این این آئی)ہارورڈ یونیورسٹی کے 124 طلبہ نے بھارتی حکومت کو ہارورڈ کے طالب علم اور سیاست دان شاہ فیصل سمیت مقامی رہنماوں کی رہائی کے لیے خط لکھ دیا۔بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو لکھے گئے خط میں مقبوضہ کشمیر میں لگائی گئی پابندیوں اور مقامی رہنماوں کی گرفتاری پر تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔بھارتی ٹی وی کے مطابق خط میں کہا گیا ہے کہ جموں و کشمیر میں استحکام کے لیے جمہوری اور پْرامن طریقوں کا استعمال کیا جائے۔ سیاست دان شاہ فیصل کو 14 اگست کے روز دہلی کے ایئرپورٹ سے گرفتار کرنے کے بعد سری نگر ہوٹل میں بنائے گئے قید خانے میں منتقل کیا گیا ہے۔شاہ فیصل نے آرٹیکل 370 کی منسوخی کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا اور اسے کشمیر کے لوگوں کے ساتھ دن دہاڑے ڈکیتی اور بہت بڑی غداری قرار دیا تھا۔سوشل میڈیا پر ایک بیان میں ان کا کہنا تھا کہ اب آپ کے پاس دو ہی راستے ہیں یا بھارتی حکومت کے پِٹھّو بن جاویا پھر علیحدگی پسند۔

طلبہ خط

مزید :

صفحہ اول -