خواتین کے بعد اب سعودی مرد بھی نکاح نامے میں شرائط درج کرا سکتا ہے مگر کیسے؟ تفصیلات منظرعام پر

خواتین کے بعد اب سعودی مرد بھی نکاح نامے میں شرائط درج کرا سکتا ہے مگر کیسے؟ ...
خواتین کے بعد اب سعودی مرد بھی نکاح نامے میں شرائط درج کرا سکتا ہے مگر کیسے؟ تفصیلات منظرعام پر

  


ریاض(ویب ڈیسک) سعودی عرب میں خواتین کے بعد اب مردوں کی جانب سے بھی نکاح نامے میں دلچسپ شرائط تحریر کرانے کے رجحان میں اضافہ ہوگیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سعودی عرب میں کچھ عرصہ پہلے تک خواتین نکاح نامے میں من پسند شرائط تحریر کرا سکتی تھیں، مثلاً یہ کہ شادی کے بعد تعلیم جاری رکھنے پر کوئی پابندی نہیں ہوگی۔ ملازمت سے نہیں روکا جائے گا، سوتن نہیں لائی جائے گی، ملازمہ کا انتظام کرنا ہوگا وغیرہ تاہم اب دلہنوں کی دیکھا دیکھی دولہوں نے بھی نکاح نامے میں شرائط پیش کرنا شروع کر دی ہیں۔سعودی وکیل احمد عیبان نے دلہوں کے حوالے سے قانونی موقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ’ اگر شوہر چاہے تو وہ بھی نکاح نامے میں اپنی پسند کی شرطیں ڈال سکتا ہے۔ مثلاً وہ یہ شرط لگا سکتا ہے کہ بیوی اس کی مرضی کے بغیر سفر نہیں کر سکتی، وہ یہ شرط بھی عائد کر سکتا ہے کہ بیوی کسی بھی قسم کی ایپلیکشن استعمال نہیں کر سکے گی۔

مزید : عرب دنیا


loading...