”سٹیو سمتھ کو باﺅنسر مارنے پر ہونے والی تنقید بالکل غلط ہے کیونکہ۔۔۔ “ انگلش باﺅلر جوفرا آرچر نے ناقدین کو منہ توڑ جواب دیدیا

”سٹیو سمتھ کو باﺅنسر مارنے پر ہونے والی تنقید بالکل غلط ہے کیونکہ۔۔۔ “ ...
”سٹیو سمتھ کو باﺅنسر مارنے پر ہونے والی تنقید بالکل غلط ہے کیونکہ۔۔۔ “ انگلش باﺅلر جوفرا آرچر نے ناقدین کو منہ توڑ جواب دیدیا

  


لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) لارڈز ٹیسٹ کے دوران آسٹریلیا کے معروف بلے باز سٹیو سمتھ کو زخمی کرنے والے انگلش فاسٹ باؤلر جوفرا آرچر نے خود پر ہونے والی تنقید کو بے جا قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی بھی نہیں چاہتا کسی کھلاڑی کو سٹریچر پر میدان سے باہر لے جایا جائے۔

تفصیلات کے مطابق لارڈز ٹیسٹ کے دوران جوفرا آرچر کا تیز باؤنسر آسٹریلین بلے باز سٹیو سمتھ کی گردن پر لگا جس پر پورے سٹیڈیم پر سکتہ طاری ہو گیا مگر جب وہ کچھ دیر بعد اپنے پیروں پر کھڑے ہوئے اور چل کر میدان سے باہر گئے تو سب نے سکھ کا سانس لیا۔

جوفرا آرچر نے سٹیو سمتھ کے متبادل کے طور پر آنے والے کرکٹر مارنس لبوشنگی کو بھی باؤنسر کا نشانہ بناڈالا تاہم گیند پوری قوت سے ہیلمٹ پر لگنے کے باوجود وہ اس کے اثرات سے محفوظ رہے جس پر انہیں خاصی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے تاہم آرچر نے اس تنقید کو بے جا قرار دیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ جان بوجھ کر سٹیوسمتھ کو نشانہ نہیں بنایا کیونکہ آپ کی توجہ وکٹ کے حصول پر ہی مرکوز ہوتی ہے۔ سٹیو سمتھ کو گیند لگنے کے بعد نیچے گرتا دیکھ کر ہر کھلاڑی کی دھڑکن ایک لمحے کیلئے رک گئی تھی لیکن جب وہ اٹھ کر کھڑے ہوئے اور چند قدم چلے تو سب نے سکھ کا سانس لیا، کوئی بھی نہیں چاہتا کہ کسی کو سٹریچر پر میدان سے باہر لے جایا جائے، میں کبھی بھی اس طرح کی چیزیں نہیں دیکھنا چاہتا اور نہ ہی دیکھنا چاہوں گا۔

مزید : کھیل


loading...