ہیلتھ اینڈ پاپولیشن کونسل قائم کی گئی، کورونا کیلئے ایکشن پلان مرتب کیا گیا: وزارت صحت 

ہیلتھ اینڈ پاپولیشن کونسل قائم کی گئی، کورونا کیلئے ایکشن پلان مرتب کیا گیا: ...

  

 اسلام آباد (این این آئی)وزارت صحت کی جانب سے دو سالا کارکردگی رپورٹ جاری کر دی جس کے مطابق وزیر اعظم آفس کی جانب سے نیشنل ٹاسک فورس آن ہیلتھ،بین الصوبائی اور بین الاوزارتی روابط موثر بنانے کیلئے پاکستان ہیلتھ اینڈ پاپولیشن کونسل کا قیام عمل میں لایاگیا،نیشنل ایکشن پلان 2019-23 فار ہیلتھ پر عمل درآمد کیلئے صوبائی و وفاقی سطح پر پالیسیز کی تشکیل دی گئیں،وفاقی دارلحکومت کو ہیلتھ کئیر ماڈل ڈسٹرکٹ بنانے کے لیے پہلی دفعہ حکمتِ عملی تیار کرلی گئی۔ منگل کو جاری رپورٹ کے مطابق پاکستان ہیلتھ اینڈ ریسرچ کونسل 2019 بِل متعارف کروانے کے لیے وزارت پارلیمانی امور کو ارسال کر دی گئی،ڈریپ ترمیمی ایکٹ کی تیاری, وزارت قانون کو جمع کروانے کے مراحل میں پہنچ گیارپورٹ کے مطابق ڈبلیو ایچ او لیول 3 کے حصول کے لیے ڈریپ میں خصوصی سرگرمیوں کا انعقاد کیا گیا،کورونا وائرس کے بعد نیشنل کووڈ ایکشن پلان مرتب کیا گیا،کورونا وائرس کے حوالے سے عوامی مہم اور بچاؤ کے لیے ایس او پیز کی تشکیل دی گئی، وزارت صحت کی جانب سے ہیلتھ فنانسنگ میں بھی متعدد انقلابی اقدامات کئے گئے،وزارت صحت کی جانب سے اسلام آباد, کے پی, تھرپارکر اور آزاد کشمیر کے لیے صحت سہولت پروگرام کا اجراء کیا گیا،احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کے تحت 12 ملین کی کفالت جاری کی گئی،تمباکو نوشی پر کنٹرول پانے کے لیے سِن ٹیکس کا نفاذ کیا گیا،وزارت صحت کی جانب سے یاران وطن ایپ کا انعقاد کیا گیا، اہم صحت سہولیات تک آسان رسائی کے لیے اقدامات کئے گئے،وزارت صحت کی جانب سے ہیلتھ سروسز کے لیے اہم پیکج کا اعلان کیا گیا،2.5 ارب روپے کی لاگت سے پی سی ون کا آغاز کیا گیا،وفاقی دارلحکومت میں پرائمری ہیلتھ کئیر کی بحالی کیلئے انقلابی اقدامات اٹھائے گئے،بہتر اور بروقت سہولیات کی فراہمی کے لیے 9 ہزار لیڈی ہیلتھ کئیر ورکرز کی بھرتی کی گئی۔

محکمہ صحت

مزید :

صفحہ آخر -