تحریک انصاف کی صوبائی قیادت کیخلاف وال چاکنگ

  تحریک انصاف کی صوبائی قیادت کیخلاف وال چاکنگ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)تحریک انصاف سندھ کی صوبائی قیادت کیخلاف احتجاج زور پکڑ گیا اب کراچی کی دیواروں پر تحریک انصاف کی صوبائی قیادت کیخلاف نعرے درج ہونا شروع ہوگئے کارکنان کا غم و غصہ اب دیواروں پر نظر آنے لگا، "گو حلیم عادل گو", گو خرم شیر زمان گو "، "گو گورنر گو" کے نعروں سے شہر کی دیواریں کالی ہوگئیں۔ لکھنے والے خان زندہ باد، ہمارا کپتان زندہ اد کے نعرے لگارہے تھے، لکھنے والوں کا کہنا تھا کہ کوئی پوچھے تو کون آیا تھا بولنا "خان کا ٹائیگر" آیا تھا, ابھی انصاف ہاؤس اور اس سے ملحقہ علاقوں  سے شروعات کی ہے اور ہمارے کارکنان پورے کراچی میں اس وقت متحرک ہیں اس کے بعد پورے سندھ کی دیواروں پر لکھا ہوگا۔ نظریاتی رکن یوسف ڈالیا نے کہا کہ پارٹی کو ہم نے بنایا تھا اب پارٹی کو ہم ہی بچائیں گے، خرم شیرزمان کراچی کیلئے کچھ نہ کرسکے اب وہ صدارت چھوڑ کر بطور رکن اسمبلی جو کرسکتے ہیں وہ کریں۔  جبکہ دوسری طرف  کراچی پریس کلب پر بھی 45روز سے نظریاتی کارکنان صوبائی قیادت کیخلاف سراپا احتجاج ہیں۔ اس دھرنے کے روح رواں و بانی رکن تحریک انصاف میر شاہدعلی رند کا کہنا ہے کہ یہ کارکنان کا غم وغصہ جس کو کنٹرول کرنا اب ہمارے بس میں بھی نہیں نظرانداز کارکنان دل برداشتہ ہوچکے ہیں خودسوزی کی باتیں کررہے ہیں مگر ہم انہیں سمجھا رہے ہیں کہ ہمارا خان ہماری ضرور سنے گا انہوں نے مطالبہ کیا کہ عامر محمود کیانی اور احمدخان نیازی پریس کلب اکر 45 روز سے جاری دھرنے میں اکر نظریاتی کارکنوں کو بھی وقت دیں اور ہمارے تحفظات چیئرمین تک پہنچائیں۔

مزید :

صفحہ آخر -