جائنٹ ایکشن کونسل کا مطالبات کے حل کیلئے قلم چھوڑ ہڑتال 

  جائنٹ ایکشن کونسل کا مطالبات کے حل کیلئے قلم چھوڑ ہڑتال 

  

 پشاور(سٹی رپورٹر)جائنٹ ایکشن کونسل (کلاس فور،تھری اور عملہ نظافت)اسلامیہ کالج پشاور نے انتظامیہ کی جانب سے مطالبات پورے نہ کرنے اور غیر سنجیدگی کے باعث آج  سے وائس چانسلر آفس کے سامنے مکمل کام چھوڑ اور قلم چھوڑ ہڑتال  ہڑتال اور ددھرنا کا اعلان کر دیا اور عندیہ دیا ہے کہ جن ملازمین نے خلاف ورزی کی تو جائنٹ ایکشن کونسل اسکے خلاف کارروائی کریگی۔اس بات کا فیصلہ جائنٹ ایکشن کونسل کے ہنگامی اجلاس میں کیا گیا جو زیر زصددارت کلاس تھری ایمپلائز ایسو سی ایشن صدر ظفر علی منعقد ہوا جسمیں تینوں ایسو سی ایشنز کے کابینہ کا  ممبران نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔اجلاس میں شرکاء کا کہنا تھا کہ ملازمین کے جائز حقوق کے حصول کیلئے 11jجون 2020کو مشترکہ ہڑتال شروع کی تھی جبکہ انتظامیہ کی جانب سے تحریری یقین دہانی اور عدوں کے بعد 23جون کو ہڑتال ملتوی کیا گیا تھا جبکہ انتظامیہ کو مطالبات کے حوالے سے اگاہ کرتے رہے تاہم انتظامیہ اور وائس چانسلر کی جانب سے مطالبات کے حوالے سے کوئی شنوائی نہیں ہوئی جو قابل افسوس ہے انتظامیہ اور وائس چانسلر کی مطالبات کی غیر سنجیدگی اور مطالبات کی عدم تکمیل کے خلاف جائنٹ ایکشن کونسل آج سے ملتوی شدہ ہڑتال پھر شروع کرنے کا اعلان کرتی ہے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -