آر ایچ سی سمہ سٹہ‘ تڑپتی خاتون کے ساتھ نرس کا ناروا سلوک 

آر ایچ سی سمہ سٹہ‘ تڑپتی خاتون کے ساتھ نرس کا ناروا سلوک 

  

بہاول پور+ سمہ سٹہ (بیورورپورٹ+ نامہ نگار) آرایچ سی سمہ سٹہ‘خانقاہ شریف‘ میں حاملہ خاتون دردسے تڑپتی رہی‘ نرس نے ہسپتال سے باہرنکال دیا۔ تفصیل (بقیہ نمبر42صفحہ7پر)

کے مطابق شہری جاوید‘سلیم‘وقار‘نعیم ودیگرنے بتایا کہ آرایچ سی سمہ سٹہ میں کسی بھی قسم کی ایمرجنسی کیلئے شام اوررات کی شفٹ کیلئے ڈاکٹر اور ایمبولینس نہیں‘ پورے آرآیچ سی کو نرس اور ڈسپنسرکے رحم وکرم پرچھوڑاہواہے گذشتہ رات بھی ایک ایمرجنسی کی صورت میں مریضہ کوآرایچ سی لایاگیاجہاں صرف ڈسپنسرموجودتھا بڑی مشکل سے نرس کوسوتے ہوئے اٹھایا جس نے انتہائی بے حسی کامظاہرہ کرتے ہوئے کہاکہ ہمارے پاس ایمرجنسی کاکوئی آپشن نہ ہے مریضہ کو بہاول پورلے جائیں اورمریضہ کو شدیدلیبرپین میں فرسٹ ایڈ بھی نہ دی گئی اورمریضہ کوہسپتال سے باہر یہ کہہ کر نکال دیا اگرتم نے الٹی کردی تو ہسپتال کی صفائی کون کریگا مریضہ کے والد‘والدہ اوراسکا شوہر آدھے گھنٹہ تک مریضہ کے ہمراہ سڑک پر کھڑے رہے جس پر فوری پر1122 کوفون کیاگیا اورمریضہ کو بی وی ایچ بہاول پورمنتقل کیاگیا بعدازاں جب آرایچ سی سمہ سٹہ خانقاہ شریف میں موجود ڈسپنسر منورعلی اور نرس نے بداخلاقی کامظاہرہ کرتے ہوئے گالم گلوچ اوردھمکیاں دیناشروع کردی شہریوں نے اس صورتحال میں وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار‘صوبائی وزیرصحت پنجاب سے فوری نوٹس لینے اورکاروائی کامطالبہ کیا ہے۔

سلوک

مزید :

ملتان صفحہ آخر -