پنجاب حکومت کا پرائیویٹ سکول ریگولیٹری اتھارٹی قائم کرنے کا فیصلہ، سمری کابینہ کو ارسال 

  پنجاب حکومت کا پرائیویٹ سکول ریگولیٹری اتھارٹی قائم کرنے کا فیصلہ، سمری ...

  

 لاہور (لیڈی رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک)پنجاب حکومت نے پرائیویٹ سکول ریگولیٹری اتھارٹی قائم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے محکمہ سکولز ایجوکیشن نے اتھارٹی قائم کرنے کی سمری کابینہ کو ارسال کردی ہے۔جبکہ دوسری جانب آل پاکستان پرائیویٹ سکول فیڈریشن نے15 اگست کو سکول کھولنے کی اجازت نہ دینے پر حکومت کے خلاف لانگ مارچ کا اعلان کردیا ہے تفصیلات کے مطا بق یہ اتھارٹی پرائیویٹ سکولز کی فیسوں اور اساتذہ کی تنخواہ کا جائزہ لے گی ذرائع کے مطابق پرائیویٹ سکولز میں کمروں کی تعداد اور بچوں کی شرح کو مانیٹر کیا جائے گا، اتھارٹی پرائیویٹ سکولز میں اساتذہ کی بھرتیوں کا معیار بھی چیک کرے گی  پرائیویٹ سکولز کو حکومت کے کنٹرول میں لانے کیلئے اتھارٹی قائم کی جارہی ہے،  ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ سکول کھلنے سے قبل کورونا ایس او پیز سے متعلق افسروں اور اساتذہ کو تربیت دی جائے گی صوبہ بھر میں تربیتی ورکشاپ کا آغاز 20 اگست سے ہوگا ضلع لاہور سے 60 ماسٹر ٹرینرزاور 596 اساتذہ کو تربیت دی جائے گی، تربیتی ورکشاپ کا سلسلہ 10 ستمبر تک جاری رہے گا سکول کھلتے ہی بچوں اور اساتذہ سے کورونا ایس او پیز پر مکمل عملدرآمد کرایا جائے گا، 22 اگست تک افسر،24 سے 26 اگست تک ماسٹر ٹرینرز،27 اگست سے2ستمبر تک اساتذہ اور 3 ستمبر سے10 ستمبر تک پی ایس ٹی اساتذہ کو تربیت دی جائے گی   آل پاکستان پرائیویٹ سکول فیڈریشن  نے15 اگست کو سکول کھولنے کی اجازت نہ دینے پر حکومت کے خلاف لانگ مارچ کا اعلان کردیا.  صدر آل پاکستان پرائیویٹ سکول فیڈریشن کے صدر کا کہنا ہے کہ تعلیم و تعلیمی اداروں پر ظالمانہ کارروائی کی مذمت کرتے ہیں دوسری جانب  وزیر تعلیم پنجاب مراد راس کی نجی سکولوں کے نمائندوں سے ملاقات میں پندرہ ستمبر کے بعد پہلے مرحلے میں تعلیمی اداروں کو کھولنے کے حوالے سے فیصلہ کر لیا گیا  ہے نجی ٹی وی کے مطابق پہلے مرحلے میں پانچویں سے دسویں جماعت کے طلبہ کو بلانے کی اجازت ہوگی تاہم تمام طلبہ کو ایک دن سکول بلانے کی اجازت نہیں ہوگی محکمہ سکول ایجوکیشن نے نجی سکولوں کو ایس او پیز بتاتے ہوئے 25 اگست تک بچوں کو سکول بلانے کا پلان مانگ لیا ہے جاری ہدایات میں کہا گیا ہے کہ جو بچے ایک دن سکول آئیں گے ان کو دوسرے دن چھٹی ہوگی نرسری سے چوتھی کلاس کے بچوں کو سکول بلانے کا فیصلہ بعد میں ہوگا۔ 

ریگولر اتھارٹی 

مزید :

صفحہ اول -