اب ڈرائیوروں کو گاڑی چلاتے ہوئے موبائل فون استعمال کرنے کی اجازت ہوگی؟ جدید ٹیکنالوجی کا ایک اور معجزہ

اب ڈرائیوروں کو گاڑی چلاتے ہوئے موبائل فون استعمال کرنے کی اجازت ہوگی؟ جدید ...
اب ڈرائیوروں کو گاڑی چلاتے ہوئے موبائل فون استعمال کرنے کی اجازت ہوگی؟ جدید ٹیکنالوجی کا ایک اور معجزہ

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) خودکار گاڑیاں تو پہلے ہی متعارف کروائی جا چکی ہیں تاہم اب اس ٹیکنالوجی میں ایسی جدت لائی جا چکی ہے کہ چند ماہ میں ہی ان گاڑیوں کے ڈرائیورز دوران ڈرائیونگ موبائل فون استعمال کر سکیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق سیلف ڈرائیونگ کاروں میں اب ’آٹومیٹڈ لین کیپنگ سسٹم‘ (Automated Lane Keeping System)نصب کیا جا رہا ہے جس کے بعد گاڑیاں موٹروے پر 112کلومیٹر فی گھنٹہ سے زائد کی رفتار پر بھی خودکار طریقے سے چلیں گی اور اپنی لین میں رہیں گی۔ 

رپورٹ کے مطابق اس سسٹم کے بل پر سیلف ڈرائیونگ گاڑیاں بنانے والی کمپنیوں کا دعویٰ ہے کہ وہ اس سسٹم کے ذریعے آئندہ ایک دہائی میں صرف برطانیہ میں 47ہزار حادثات کو ٹالیں گی اور 3ہزار 900لوگوں کو موت کے منہ میں جانے سے بچائیں گی کیونکہ یہ سسٹم انسان ڈرائیور سے کئی گنا زیادہ مو¿ثر ثابت ہو گا اور گاڑی کو حادثہ پیش آنے کا امکان بہت کم رہ جائے گا۔ کمپنیوں نے اس سسٹم کی بنیاد پر ڈرائیونگ سے متعلق قوانین پر بھی نظرثانی کا مطالبہ کیا ہے اور برطانوی حکومت غور کر رہی ہے کہ آیا جن گاڑیوں میں یہ سسٹم نصب ہو گا انہیں 112کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے موٹروے پر چلنے کی اجازت دینی چاہیے یا نہیں۔ اس کے علاوہ بھی دیگر پہلوﺅں پر غور کیا جا رہا ہے۔ اگر برطانوی حکومت اجازت دے دیتی ہے تو یہ پہلی بار ہو گا کہ موٹروےز پر پوری رفتار کے ساتھ دوڑتی کاروں کے ڈرائیور اپنے موبائل فون پر چیٹنگ کرنے اور فلمیں دیکھنے میں مصروف ہوں گے اور ان کے چالان بھی نہیں ہوں گے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -