"ریا چکروتی نے جو وکیل کیا ہے اگر میں اس سے ملنا چاہوں تو اپوائنٹمنٹ لینے میں ہی ہفتہ لگ جائے گا، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ۔۔۔ " کنگنا رناوت نے بڑا الزام لگادیا

"ریا چکروتی نے جو وکیل کیا ہے اگر میں اس سے ملنا چاہوں تو اپوائنٹمنٹ لینے میں ...

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بالی ووڈ اداکارہ کنگنا رناوت کا کہنا ہے کہ ریا چکروتی نے سشانت سنگھ راجپوت خود کشی کیس میں جس وکیل کی خدمات حاصل کی ہیں وہ انتہائی مہنگا ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ریا کے پیچھے کوئی نہ کوئی مافیا ضرور ہے۔

بھارتی ٹی وی چینل ریپبلک نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کنگنا رناوت نے کہا کہ ریا چکروتی نے جس وکیل کی خدمات حاصل کی ہیں اگر مجھے اس سے ملنا ہو تو اس کی اپوائنٹمنٹ لینے میں ہی مجھے ایک ہفتہ لگ جائے گا لیکن ریا نے چٹکی بجاتے ہی اس وکیل کو ہائر کرلیا۔

کنگنا نے بتایا کہ ان کے خلاف بھی کریمنل کیسز ہوئے تھے لیکن انہوں نے تو کوئی مہنگا وکیل نہیں کیا تھا بلکہ اپنے فیملی لائر رضوان صدیقی کی خدمات حاصل کی تھیں۔

اداکارہ نے الزام لگایا کہ جس طرح کا مہنگا وکیل ریا چکروتی نے ہائر کیا ہے اس سے یوں لگتا ہے کہ ان کے پیچھے کوئی بڑا مافیا ہے، یا ہوسکتا ہے کہ بالی ووڈ کا وہ مافیا ان کی مدد کر رہا ہے جو سشانت سنگھ کیس سے خوفزدہ ہے۔

خیال رہے کہ ریا چکروتی نے اپنا کیس لڑنے کیلئے ستیش منی شندے کی خدمات حاصل کی ہیں۔ ستیش منی شندے بھارت کے معروف کرمنل لائر ہیں جو سیاستدانوں، کاروباری شخصیات اور فلمی ستاروں کے کیسز لڑنے میں شہرت رکھتے ہیں۔ وہ انڈیا کے سب سے بڑے وکیل رام جیٹھ ملانی کے شاگرد ہیں اور ان کے زیر سایہ 10 سال تک کام کرتے رہے ہیں۔

ستیش منی شندے نے ماضی میں سنجے دت کا ممبئی بم حملوں کے کیس میں دفاع کیا اس کے علاوہ وہ سلمان خان کے بھی وکیل ہیں۔

بالی ووڈ لائف کی ایک رپورٹ کے مطابق ستیش منی شندے کیس لڑنے کیلئے بھاری معاوضہ لیتے ہیں۔ ایک اندازے کے مطابق وہ جب کوئی کیس لڑتے ہیں تو فی دن 10 لاکھ روپے کے حساب سے فیس چارج کرتے ہیں۔

مزید :

تفریح -