شہباز گل کی حالت ٹھیک نہیں ، پیر تک پمز میں رکھا جائے ، ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ اسلام آباد 

شہباز گل کی حالت ٹھیک نہیں ، پیر تک پمز میں رکھا جائے ، ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ اسلام ...
شہباز گل کی حالت ٹھیک نہیں ، پیر تک پمز میں رکھا جائے ، ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ اسلام آباد 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ اسلام آباد میں شہباز گل کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر  سماعت ہوئی، جہاں عدالت نے قرار دیا کہ شہباز گل کی حالت ٹھیک نہیں لہٰذا انہیں پیر تک  پمز میں رکھا جائے ۔ 

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد میں پولیس کی جانب سے شہباز گل کے  8 روزہ جسمانی ریمانڈ کی درخواست کی گئی  جس پر عدالت نے استفسار کیا کہ پہلے دو روز کا جسمانی ریمانڈ تھا اب آپ 8 روز کا جسمانی ریمانڈ مانگ رہے ہیں ، دیکھنا ہوگا کہ تکنیکی طور پر جسمانی ریمانڈ ہوا بھی ہے یا نہیں ۔

شہباز گل کے وکیل نے عدالت میں کہا کہ میرے موکل کی حالت دیکھ لیں ۔ جج نے شہباز گل سے سوال کیا کہ کیا آپ یہاں کھڑے رہ سکتے ہیں جس پر شہباز گل نے عدالت میں کہا کہ مجھے آکسیجن ماسک دے دیں تو میں موجود رہ سکتا ہے ۔عدالت کے حکم پر شہباز گل کو آکسیجن ماسک مہیا کر دیا گیا ۔

عدالت نے سماعت کے بعد  فیصلہ محفوط کیا جو کچھ دیر بعد سنا دیا گیا ، عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ شہباز گل  کی حالت ٹھیک نہیں لہذا انہیں پیر کے روز تک پمز میں رکھا جائے ،  انہیں دمہ کا مسئلہ ہے ان کے دمہ کے ٹیسٹ دوبارہ کئے جائیں اور پیر کو میڈیکل رپورٹ دوبارہ جمع کرائی جائے ۔

شہباز گل کے وکلاء کی جانب سے درخواست کی گئی کہ  ان کے موکل کا جسمانی ریمانڈ مکمل ہو چکا ہے جس پر عدالت نے درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ریمانڈ ابھی شروع ہی نہیں ہوا۔

خیال رہے کہ  پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل کو  سخت سیکیورٹی میں پمز ہسپتال سے کچہری منتقل کیا گیا ،  نجی ٹی وی "جیو نیوز" کے مطابق پولیس شہباز گل کو پمز ہسپتال کے پچھلے دروازے سے لیکر کچہری کیلئے روانہ ہوئی،جبکہ عدالت جاتے وقت شہباز گل نے منہ پر آکسیجن ماسک لگایا ہوا تھا اور انہیں وہیل چیئر پر اسلام آباد کچہری منتقل کیا گیا۔

 اسلام آباد کچہری میں پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی  جبکہ کمرہ عدالت کے باہر ایف سی کی نفری بھی  موجود تھی ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -