چیئرمین پیمرا کی بحالی سپریم کورٹ میں چیلنج

چیئرمین پیمرا کی بحالی سپریم کورٹ میں چیلنج
چیئرمین پیمرا کی بحالی سپریم کورٹ میں چیلنج

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی حکومت نے اسلام آباد ہائی کورٹ سے چیئرمین پیمرا چوہدری عبدالرشید کی بحالی کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ چیئرمین پیمرا کی تقرری قواعد وضوابط کے برعکس ہوئی، ان کی برطرفی غیرقانونی نہیں تھی، ہائیکورٹ کے فیصلہ کو منسوخ کیا جائے۔حکومت نے 15 دسمبر کو چیئرمین پیمرا چوہدری عبدالرشید احمد کا تقررغیرقانونی اور سپریم کورٹ کی گائیڈ لائنز کے برخلاف قرار دیتے ہوئے انہیں عہدے سے برطرف کر دیا تھا جس کے بعد چوہدری عبدالرشید نے برطرفی اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کی تھی۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے چیرمین پیمرا چوہدری عبدالرشید کی برطرفی کے خلاف حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے انہیں عہدے پر بحال کردیا تھا تاہم اب حکومت نے ہائی کورٹ کی جانب سے بحالی کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔وزارت اطلاعات اور اسٹیبلشمنٹ کی طرف سے چیئرمین پیمرا چوہدری رشید کی بحالی کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا گیاہے، چیئرمین پیمرا کو اسلام آباد ہائیکورٹ نے بحال کیا تھا تھا۔واضح رہے کہ چوہدری عبدالرشید گزشتہ حکومت میں سیکرٹری اطلاعات و نشریات کے عہدے پرکام کر رہے تھے جنہیں سابق صدر آصف زرداری نے 26 جنوری 2013 کو ترقی دے کر چیئرمین پیمرا تعینات کردیا تھا.

مزید :

قومی -