سوئی نادرن نے گیس کی قلت کا بہانہ بنا کر قوم سے دھوکہ کیا: سی این جی ایسوسی

سوئی نادرن نے گیس کی قلت کا بہانہ بنا کر قوم سے دھوکہ کیا: سی این جی ایسوسی

آج بھی پائپ لائنوں میں 3000پیک گیس موجود ہے، عوام پھربھی سی این جی سے محروم

سوئی نادرن نے گیس کی قلت کا بہانہ بنا کر قوم سے دھوکہ کیا: سی این جی ایسوسی

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) چیئرمین سپریم کونسل آل پاکستان سی این جی ایسوسی ایشن غیاث عبداللہ پراچہ نے کہا ہے کہ سوئی نادرن نے گیس کی قلت کا بہانہ بنا کر قوم سے دھوکہ کیااور اپنے مفادات پورے کئے، گیس کی کمی کا رونا رونے والوں نے بندش کے گیارہ روز بعد صنعت کو اچانک سپلائی بحال کر دی مگر یہ نہیں بتایا کی اضافی گیس کہاں سے آئی ۔صنعتوں کو گیس کی سپلائی بحال ہونے کے باوجودآج کی تاریخ میںپائپ لائنوں میں 3000پیک گیس موجود ہے مگر عوام کو پھربھی سی این جی سے محروم رکھا جا ر رہا ہے۔وزیر اعظم مداخلت کرکے عوام کو بیوروکریسی کے چنگل سے بچائیں اورسی این جی سے وابستہ لاکھوں افراد کاروزگار اور اربوں کی سرمایہ کاری بچائیں۔غیاث پراچہ نے کہا کہ گیس کمپنی کی جانب سے صنعتوں کوہفتہ میں سات دن گیس کی بحالی سے پتہ چلتا ہے کہ ملک میں قدرتی گیس کی کوئی کمی نہیں تھی بلکہ کمی کا بہانہ بنایا گیا تھا۔ نو ماہ گیس سپلائی کے معاہدہ والے شعبوں کو گیس دینا اور بارہ ماہ کے معاہدوں والے شعبہ کو محروم رکھنا سازش ہے کیونکہ سی این جی شعبہ کے پاس گیس کا کوئی متبادل نہیں۔

مزید :

بزنس -