آئل ٹینکر الٹنے سے 2 ہلاک، دو اہلکاروں سمیت 10 افراد جھلس گئے

آئل ٹینکر الٹنے سے 2 ہلاک، دو اہلکاروں سمیت 10 افراد جھلس گئے
آئل ٹینکر الٹنے سے 2 ہلاک، دو اہلکاروں سمیت 10 افراد جھلس گئے

  

کراچی(ویب ڈیسک) سپرہائی وے پر الٹنے والے آئل ٹینکر سے تیل لے جانے کے لیے آنے والے 2 افراد جھلس کر ہلاک جبکہ 10 زخمی ہوگئے۔ریسکیو ذرائع کے مطابق کراچی اور حیدرآباد کے درمیان شاہراہ پر نوری آباد کے قریب آئل ٹینکر بریک فیل ہونے کی وجہ سے چڑھائی چڑھتے ہوئے الٹ گیا۔

آئل ٹینکر الٹنے کے بعد اطراف میں موجود ہوٹل اور علاقہ مکینوں نے موقع غنیمت جانتے ہوئے گرنے والے تیل کو ذاتی استعمال کے لیے لے جانا شروع کردیا۔سپر ہائی وے پر موجود پولیس موبائل نے بھی جنریٹر کے لیے آئل جمع کیا، اسی لوٹ مار کے دوران اچانک ٹینکر میں آگ بھڑک اٹھی، جس نے قریب کھڑی پولیس موبائل کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا۔مقامی اخبار کے مطابق واقعے میں 2 پولیس اہلکاروں سمیت 10 افراد جھلس کر زخمی ہوئے اور یہ سب افراد وہ تھے جو تیل کی لوٹ مار کرنے کے دوران آتشزدگی کی زَد میں آئے۔دوسری جانب ڈی ایس پی نوری آباد کا کہنا تھا کہ دونوں پولیس اہلکار لوگوں کی جان بچانے کی کوشش کرتے ہوئے زخمی ہوئے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ ٹینکر مالکان نے مقامی افراد کو مزدوری پر بلا کر آئل اکھٹا کرنے کا کہا تھا تاکہ ان کا پیٹرول ضائع ہونے سے بچ جائے۔زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد کے لیے ایمبولنس کے ذریعے جامشورو کے لیاقت نیشنل ہسپتال منتقل کردیا گیا جس کے بعد انہیں کراچی سول ہسپتال کے برنس وارڈ منتقل کرنے کے انتظامات کیے گئے۔ریسکیو ٹیموں اور فائر بریگیڈ نے جائے حادثہ پر پہنچ کر آگ پر قابو پا لیا۔

مزید : کراچی