میں اپنے شوہر کی دوسری شادی کرانا چاہتی ہوں تاکہ۔ ۔ ۔ پاکستانی خاتون نے ایسی بات کہہ دی جس کی کسی نے ہمت نہیں کی تھی

میں اپنے شوہر کی دوسری شادی کرانا چاہتی ہوں تاکہ۔ ۔ ۔ پاکستانی خاتون نے ایسی ...

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)استطاعت رکھنے کی صورت میں دین میں مرد کو چار شادیوں کی اجازت ہے لیکن مشرقی معاشرے میںبیگمات یہ اجازت دینے پر کسی صورت تیار نہیں، اولاد نہ ہونے کی وجہ سے اپنے خاوند کی دوسری شادی کی خواہشمند خاتون کے بعد ایک او رپاکستانی خاتون منظرعام پرآگئی جس نے اپنے شوہر کیلئے دوسری بیگم لانے کی خواہش ظاہر کردی لیکن اس کا مقصد کسی نادار ، بے آسرا اور ضرورت مند خاتون کی مدد کرنا ہے ۔

ایک خاتون نے شناخت ظاہر کیے گئے بغیر ایک بیوی کے نام سے’ڈیلی پاکستان گلوبل‘کوایک کھلے خط میں لکھا کہ وہ بھی اپنے شوہر کی دوسری شادی کے بارے میں سوچ رہی ہیں لیکن ان کا مقصد اولاد نہیں بلکہ کسی کی مدد کرنا ہے ، ایک ایسے خاتون ترجیح ہے جو مطلقہ یابیوہ ہو، ایک یادوبچوں کی ماں بھی ہوسکتی ہے تاکہ اُنہیں بھی ظالم معاشرے میں سکون کی زندگی مل سکے ، معاشرے میں اکلوتی خاتون یا اکلوتی ماں(جس کا خاوند نہ ہو) کیلئے زندگی نہ صرف مشکل بلکہ دکھی بھی کردی جاتی ہے ۔

خاتون نے اپنا خط لکھنے کی وجہ بتاتے ہوئے لکھاکہ’ وہ یہ اس لیے لکھ رہی ہیں کیونکہ وہ چند وجوہات کے باعث اس معاملے کی نوعیت کا اندازہ نہیں کرسکتیںاور امید ہے کہ اس کی بھی مدد کی جائے گی ، میں اس موضوع پر اپنی دوستوں ، خاندان اور حتیٰ کہ خاوند سے بھی بات نہیں کرسکتیں کیونکہ میں اس پر عمل درآمد کیلئے مکمل طورپر تیار ہوں ، میں نہیں چاہتی کہ یہ بات کسی غلط بندے تک پہنچے یا پھر کسی صحیح شخص کے پاس غلط اندازمیںیا غلط وقت پر پہنچے ، مذاق اپنی جگہ لیکن میں یہ بھی نہیں چاہتی کہ یہ سب کچھ میری مکمل رضامندی کے بغیر ہو۔

اس خاتون کو کیا مشورہ ملا؟ جاننے کیلئے یہاں کلک کریں۔

ہم جب یہ خیال کرتے ہیں کہ خاندان مکمل ہے ، ہمارے بچے جوان ہیں تو میں کسی دوسرے کی مدد نہیں کرناچاہتی کیونکہ ان کی وجہ سے ہمیں مستقبل میں پریشانیوں کا سامنا کر ناپڑسکتاہے یاپھر میرے اس نیک مقصد کی وجہ سے ہمارے بچوں کا معاشی مستقبل تباہ ہوسکتاہے ‘۔

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...