اسلامی سیاست، معیشت، عدالت، صحافت ہر شعبہ زندگی میں غالب ہونے کیلئے آیا: سراج الحق

اسلامی سیاست، معیشت، عدالت، صحافت ہر شعبہ زندگی میں غالب ہونے کیلئے آیا: ...

کراچی (سٹاف رپورٹر ) امیرجماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ محبت رسول ؐ کا تقاضہ ہے کہ اپنی انفرادی واجتماعی زندگی کو اس کے نور سے منور کریں اور اس شریعت کے تابع بنائیں جو نبی کریم ؐ لے کر آئے ہیں ، سیاست ، معیشت ، عدالت ، حکومت ، صحافت ہر شعبہ زندگی میں نبی مہربان ؐ کی تعلیمات کو نافذ کریں ، دین غالب ہونے کے لیے آیا ہے اور اقامت دین کی جدوجہد پوری امت کا فریضہ ہے ۔ دعوت تبلیغ ، اصلاح معاشرہ اور حکمرانوں کو سیدھے راستے پر لانے کی کوششیں اقامت دین کو یقینی بنانے کے لیے ضروری ہے تاکہ دنیا میں سکون اور چین اور آخرت میں فلاح و کامرانی مل سکے۔ ان خیالات کا اظہا رانہوں نے جماعت اسلامی ضلع وسطی کراچی کے تحت جیفکو گراؤنڈ نارتھ ناظم آباد میں عظیم الشان ’’سیرت النبی ؐکانفرنس ‘‘سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ کانفرنس سے ملی یکجہتی کونسل کے مرکزی صدر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر ، امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن ، جامعۃ الصفہ کے نائب مہتمم مفتی محمد زبیر ، امیر جماعت اسلامی ضلع وسطی منعم ظفر خان اور سکریٹری ضلع محمد یوسف نے بھی خطاب کیا ۔جماعت اسلامی سندھ کے امیر ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی ، نائب امیر کراچی ڈاکٹر اسامہ رضی اور سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری بھی موجود تھے ۔کانفرنس میں سندھ اسمبلی کے اسلام مخالف بل کی مذمت اور اسے فی الفور واپس لینے کے لیے اور شام ،عراق، برما ، لیبیا ، یمن ، کشمیر اور دیگر ممالک کے مسلمانوں سے اظہار یکجہتی اور مظالم بند کرانے کے حوالے سے قرارداد یں بھی منظور کی گئیں ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ سپریم کورٹ میں سرکاری وکیل نے کہا کہ قومی اسمبلی میں وزیر اعظم کی تقریر اور قوم سے خطاب تو سیاسی تقریریں تھیں۔ اگر سیاست جھوٹ ، فریب ، دھوکے ، قومی خزانہ لوٹنے اور قوم کے ساتھ بدعہدی کرنے کا نام سیاست ہے تو ہم ایسی سیاست سے پناہ مانگتے ہیں ۔ صاحبزادہ ابو الخیر محمد زبیر نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے امت مسلمہ کو بڑی عظمت والا رسول عطا فرمایا اور بڑی شان والا دین دیا اور اس دین کے ذریعے اس سے قبل جتنے دین آئے تھے ان سب پر اس دین کو غالب کردیا ۔آج اسلام دنیا بھر میں تیزی سے پھیلنے والا مذہب ہے ۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ نبی کریم ؐ کی سنت اور تعلیمات کو اختیا ر کر کے ہی امت عروج کا راستہ حاصل کرسکتی ہے ۔قرآن پاک اور سیرت مطہرہ ؐ دو الگ الگ چیزیں نہیں ہیں ان دونوں کو تھام کر ہی ہم فلاح و کامرانی حاصل کرسکتے ہیں ، سیرت پاک ؐ میں ہر چھوٹے بڑے کام کرنے کا طریقہ اور رہنما اصول موجود ہیں ۔سندھ اسمبلی کا مذہب تبدیلی کا بل اصل میں ارتداد کا بل ہے جو کفر سے زیادہ سنگین جرم ہے ۔ شراب قطعاً ممنوع اور حرام ہے اور کسی بھی مذہب میں اس کی اجازت نہیں سندھ حکومت اگر اسے فروخت کرنے کی کوشش کرے گی تو اس کے خلاف عوام شدید احتجاج کریں گے ۔ منعم ظفر خان نے کہا کہ پوری انسانیت کو امن و سکون اور چین صرف نبی کریم ؐ کی تعلیمات سے ہی مل سکتا ہے ۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...