اسلام پاکیزہ معاشرہ وجود میں لانا چاہتا ہے ،ممتاز حسین سہتو

اسلام پاکیزہ معاشرہ وجود میں لانا چاہتا ہے ،ممتاز حسین سہتو

کراچی (اسٹاف رپورٹر) اسلام پاکیزہ معاشرہ وجود میں لانا چاہتا ہے، بندے کا مالک سے مضبوط تعلق تمام آفات سے نجات کا سبب بنتا ہے، انسان اپنے رب سے جتنا دور اتنا ہی مسائل کا شکار ہوگا، جب بندے کا تعلق اپنے رب سے جڑ جاتا ہے تو زندگی پاکیزہ، اسی طرح زندگی کے تمام شعبہ جات خیر وبرکت کے مراکز بن جاتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکریٹری ممتاز حسین سہتو نے مسجد اقصیٰ ضلع شرقی کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکیزہ زندگی انسان اللہ کے ذکر اور اس کے سامنے سجدہ ریزی پر سکھادیتی ہے، وہ معاشرہ پاکیزہ نہیں جہاں اللہ کے احکامات کا مذاق اڑانے سے آگے بڑھ کر اس کیخلاف قانون سازی کی جاتی ہے جیسے پاکستان کی اسمبلیوں میں ہورہا ہے۔ اسلام پاکیزہ معاشرے کا وجود چاہتا ہے جہاں عدل وانصاف ہو۔ رویوں میں ادب واحترام، شفقت ومخلصی لیکر انسان دوسرے انسان کا خیر خواہ، عوام اور حکمران یکساں ہوں، ایک دوسرے سے محبت کرنے والے ہوں۔ جماعت اسلامی اس مقصد کو حقیقی معنیٰ میں نافذ کرنے کی بات کرتی ہے جس سے انسانیت سکھ کا سانس لے سکے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...