حکومتی احکامات کھوہ کھاتے ،140خواتین اساتذہ کے تبادلے

حکومتی احکامات کھوہ کھاتے ،140خواتین اساتذہ کے تبادلے

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)محکمہ تعلیم ڈیرہ زنانہ نے صوبائی حکومت اور ضلعی حکومت کے احکامات ہوا میں اڑاتے ہوئے 140سے زائد خواتین اساتذہ کے تبادلے کرڈالے من پسند لین دین اور نزرانہ دینے والی اساتذہ کو نزدیکی سکولوں میں تعینات کردیا ۔متاثرہ اور سفارش نہ ہونے والی خواتین اساتذہ نے ضلعی ناظم ڈیرہ سے فلفور ایکشن لینے کا مطالبہ کردیا ۔تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم ڈیرہ زنانہ کی آفیسر پروین خٹک نے 140سے زائد خواتین اساتذہ کے تبادلے ضلع بھر کے مختلف اسکولوں میں کردئیے ہیں ۔ یہ تبادلے ایس ڈی ای او غلام فاطمہ کی جانب سے تیار کردہ پرپوزل پر کیے گئے ہیں ۔ان تبادلوں میں ان خواتین کو دور دراز اسکولوں میں بھیجا گیا ہے ۔ جن کی موجودہ اسکولوں میں اچھی کارکردگی تھی مگر سفارش نہ ہونے پر ان کو یہ سزا دی گئی ہے ۔جبکہ من پسند اساتذہ کو نزدیکی سکولوں میں بھیجا گیا ہے اسطرح لین دین اور نزرانہ دینے والوں کو بھی پر کشش سکولوں میں تعینات کیا گیا ہے ۔محکمہ تعلیم زنانہ ڈیرہ کی آفیسر پروین خٹک سے ان تبادلوں کے حوالے سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے موقف نہیں دیا جبکہ پروپوزل کے حوالے سے بھی غلام فاطمہ سے رابطہ نہ ہوسکا ادھر متاثرہ خواتین اساتذہ نے ان تبادلوں پر ضلعی ناظم ڈیرہ سے رابطہ کیا ہے اور ان کو سارے حقائق سے آگا ہ کیا ہے ۔

حکومتی احکامات کھوہ کھاتے ،140خواتین اساتذہ کے تبادلے

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)محکمہ تعلیم ڈیرہ زنانہ نے صوبائی حکومت اور ضلعی حکومت کے احکامات ہوا میں اڑاتے ہوئے 140سے زائد خواتین اساتذہ کے تبادلے کرڈالے من پسند لین دین اور نزرانہ دینے والی اساتذہ کو نزدیکی سکولوں میں تعینات کردیا ۔متاثرہ اور سفارش نہ ہونے والی خواتین اساتذہ نے ضلعی ناظم ڈیرہ سے فلفور ایکشن لینے کا مطالبہ کردیا ۔تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم ڈیرہ زنانہ کی آفیسر پروین خٹک نے 140سے زائد خواتین اساتذہ کے تبادلے ضلع بھر کے مختلف اسکولوں میں کردئیے ہیں ۔ یہ تبادلے ایس ڈی ای او غلام فاطمہ کی جانب سے تیار کردہ پرپوزل پر کیے گئے ہیں ۔ان تبادلوں میں ان خواتین کو دور دراز اسکولوں میں بھیجا گیا ہے ۔ جن کی موجودہ اسکولوں میں اچھی کارکردگی تھی مگر سفارش نہ ہونے پر ان کو یہ سزا دی گئی ہے ۔جبکہ من پسند اساتذہ کو نزدیکی سکولوں میں بھیجا گیا ہے اسطرح لین دین اور نزرانہ دینے والوں کو بھی پر کشش سکولوں میں تعینات کیا گیا ہے ۔محکمہ تعلیم زنانہ ڈیرہ کی آفیسر پروین خٹک سے ان تبادلوں کے حوالے سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے موقف نہیں دیا جبکہ پروپوزل کے حوالے سے بھی غلام فاطمہ سے رابطہ نہ ہوسکا ادھر متاثرہ خواتین اساتذہ نے ان تبادلوں پر ضلعی ناظم ڈیرہ سے رابطہ کیا ہے اور ان کو سارے حقائق سے آگا ہ کیا ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...