مشرقی حلب سے باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں سے شہریوں کا انخلاءشروع ہو گیا

مشرقی حلب سے باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں سے شہریوں کا انخلاءشروع ہو گیا
مشرقی حلب سے باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں سے شہریوں کا انخلاءشروع ہو گیا

بیروت (ڈیلی پاکستان آن لائن )مشرقی شہر حلب سے درجنوں بسیں باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں سے شہریوں کو لیکر محفوظ مقامات کی طرف روانہ ہو گئیں۔ 

تفصیلات کے مطابق مشرقی حلب سے باغیوں کے زیرِ قبضہ جنگ زدہ علاقوں سے بسوں اور ایمبولینسز کے ذریعے شہریوں کا انخلا دوبارہ شروع ہو گیا ہے۔

اقوام متحدہ کے اہلکارکا کہنا ہے کہ3500 شہریوں کو لے کر50سے زائد بسوں اور2 ایمبولینسز نے مشرقی حلب سے باہر نکلنا شروع کر دیا ہے اورمشرقی حلب سے پہلا قافلہ مقامی وقت کے مطابق گیارہ بجے روانہ ہوا۔

لاہور ہائی کورٹ نے تمام نابینا افراد کو میرٹ پر نوکری دینے کا حکم دیدیا

مشرقی حلب میں موجود ڈاکٹروں کی ٹیم کے سربراہ احمد ال دبیس کے حوالے سے بتایا کہ پانچ بسیں شہریوں کو لے کر باغیوں کے علاقے خان الا اصل پہنچی ہیں جس کے بعد یہ امید کی جا رہی ہے کہ وہ حلب اور ادلب میں حکومت کے زیرِ قبضہ علاقوں کی جانب سفر کریں گی۔

اس سے پہلے حلب میں حکومت مخالف باغیوں نے شہریوں کے انخلا کے لیے جانے والی کئی بسوں کو نذر آتش کر دیا تھا جس کے بعد انخلا کا عمل رک گیا تھا۔

مشرقی حلب میں ہزاروں شہری انتہائی نامناسب حالات میں وہاں سے نکلنے کا انتظار کر رہے ہیں۔

مشرقی حلب سے انخلا کا ابتدائی معاہدہ جمعے کو ختم کر دیا گیا تھا جس کے باعث مختلف علاقوں میں بڑی تعداد میں شہری خوراک اور رہائشی سہولیات کی عدم دستیابی میں پھنس کر رہ گئے تھے۔

مزید : عرب دنیا

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...