نیوز گیٹ سکینڈل کی تحقیقات کیلئے قائم کمیٹی کی معیاد میں 7 جنوری تک توسیع کردی گئی ہے،حکومت کا ہائی کورٹ میں بیان

نیوز گیٹ سکینڈل کی تحقیقات کیلئے قائم کمیٹی کی معیاد میں 7 جنوری تک توسیع ...
نیوز گیٹ سکینڈل کی تحقیقات کیلئے قائم کمیٹی کی معیاد میں 7 جنوری تک توسیع کردی گئی ہے،حکومت کا ہائی کورٹ میں بیان

لاہور(نامہ نگارخصوصی) چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ کووفاقی حکومت کی طرف سے آگاہ کیا گیا ہے کہ نیوز گیٹ سکینڈل کی تحقیقات کیلئے قائم کمیٹی کی معیاد میں 7 جنوری تک توسیع کر دی گی ہے جس پرفاضل جج نے نیوزلیک کے معاملہ پرانکوائری کمیٹی کے چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ عامررضااور دیگر ممبران کی تعیناتیوں کے خلاف دائر درخواست میں انکوائری رپورٹ داخل کرانے کیلئے حکومت کو آئندہ ماہ تک کی مہلت دیتے ہوئے مزیدسماعت 10جنوری تک ملتوی کر دی ہے ۔درخواست گزار الیاس خان کی طرف سے دائر درخواست میں اعتراض اٹھایا گیا کہ کمیشن غیر جانبدار افراد پر مشتمل نہیں ہے ۔ انکوائری کمیٹی کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ عامررضا خان اور کمیٹی کے دیگر ممبران کے حکمران شریف خاندان سے تعلقات ہیں۔نیوز لیکس کی تحقیقات کے لیے حاضر سرو س جج کو کمیٹی کا سربراہ بنانے کی بجائے ریٹائرڈ جج پر مشتمل انکوائری کمیٹی سانحہ ماڈل ٹاون کمیٹی کی طرز پر حکمرانوں کو فائدہ پہنچانے کے لئے بنائی گئی۔کمیٹی قائم کرتے ہوئے دیگر صوبوں کی نمائندگی کو مد نظر نہیں رکھا گیا،قانون کے تحت وفاقی حکومت کو انکوائری کمیٹی کے قیام کا کوئی اختیار نہیں، البتہ حکومت اس طرح کے معاملے کے لئے کمیشن قائم کر سکتی ہے۔اس لیے انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہوں گے۔ لہذا اعلی عدلیہ کے موجودہ جج کی سربراہی میں کمیشن تشکیل دیا جائے۔عدالت کے استفسار پر وفاقی حکومت کی وکیل نے بتایا کہ سیکرٹ ایکٹ کے تحت کمیشن کی رپورٹ عدالت پیش نہیں کی جاسکتی ۔جس پر فاضل عدالت نے قرار دیا کہ معاملہ حساس ہے تو رپورٹ کا ان کیمرہ جائزہ لے لیں گے لیکن رپورٹ ریکارڈ پر لازمی لائی جائے جبکہ کیس پر مزید سماعت10جنوری تک ملتوی کردی ۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...