جعلی سینئر وفاقی وزیر کی ضمانت کی درخواست مسترد

جعلی سینئر وفاقی وزیر کی ضمانت کی درخواست مسترد
جعلی سینئر وفاقی وزیر کی ضمانت کی درخواست مسترد

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(نامہ نگار)جوڈیشل مجسٹریٹ ضلع کچہری فاروق اعظم سوسہل نے جعلی سینئر وفاقی وزیر کی ضمانت کی درخواست مسترد کر دی۔جوڈیشل مجسٹریٹ نے ملزم سلامت علی چوہان کی درخواست ضمانت پر سماعت شروع کی تو ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ایف آئی اے نے ملزم کے خلاف جھوٹا اور بے بنیاد مقدمہ درج کر کے اسے جیل بھجوا رکھا ہے،انہوں نے کہا کہ ایف آئی اے ابھی تک ملزم کے خلاف کوئی ٹھوس شواہد صفحہ مثل پر نہیں لا سکا ،ملزم کی درخواست ضمانت منظور کی جائے، ایف آئی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم سلامت علی نے نابھہ روڈ پر اپنا دفتر بنا رکھا تھا اور خود کو سینئر وفاقی وزیر ظاہر کر کے سرکاری محکموں اور عام شہریوں سے فراڈ کر رہا تھا، انہوں نے عدالت کو مزید بتایا کہ ملزم نے ڈی سی او فیصل آباد کو دفتر بنوانے کا خط لکھ جبکہ ڈی سی او لاہور کو فول پروف سکیورٹی فراہم کرنے کے لئے بھی خط لکھا، ایف آئی اے نے کہا کہ کہ ملزم شہریوں سے بھی رقوم بٹورتا رہا ہے ، اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ پبلک پراسکیوٹر خرم شہزاد نے دلائل دیئے کہ ملزم نے ضمانت کے لئے غلط فورم سے رجوع کیا ہے اور ضلع کچہری کو ملزم کی درخواست ضمانت پر سماعت کا اختیار نہیں ، ملزم کو ضمانت کے لئے سیشن عدالت سے رجوع کرنا چاہئے لہٰذا درخواست ضمانت خارج کی جائے، عدالت نے فریقین کے دلائل سننے اور ریکارڈ دیکھنے کے بعد جعلی سینئر وفاقی وزیر کی ضمانت کی درخواست مسترد کر دی۔

مزید : لاہور