پی ایس ایف کے رہنما عبد المعید کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر احتجاج

پی ایس ایف کے رہنما عبد المعید کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر احتجاج

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (نمائندہ خصوصی ) پاکستان پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ لاہور کے رہنماء نصیر احمد، عبدالکریم میو، اختر شاہ ، حمزہ شیخ، خرم گجر، عثمان الحق قریشی، غلام حسین کھوکھر، ملک عباس، رضوان خان جیالہ نے اپنے مشترکہ بیان میں پی ایس ایف کے رہنما عبد المعید کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ عبدالمعید کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ پنجاب پولیس شہریوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہو چکی ہے۔ روزانہ ون ویلروں کے گروپ سڑکوں پردھم مچاتے ہیں بدمعاشی اور غنڈوہ گردی کے ذریعے شریف شہریوں پر تشدد کرتے ہیں اور راستے میں آنے والے شہریوں کو قتل کرنے سے بھی گریز نہیں کرتے۔
عبدالمعید کا قتل اس کی سب سے بڑی مثال ہے۔ مسلم لیگ ن کے موجودہ دور حکومت میں جرائم کی شرح میں کئی سو گنا اضافہ ہوچکا ہے۔ قتل و غارت، ڈکیتیوں، بھتہ خوری قبضہ مافیا، اغواء برائے تاوان کمسن بچوں اور بچیوں پر جنسی درندگی کے واقعات میں تشویش ناک حد تک اضافہ ہو چکا ہے اربوں روپے کا بجٹ خرچ ہونے کے باوجود پنجاب پولیس کی کارکردگی میں کوئی اضافہ نہیں ہوا ہے۔ بلکہ سابق سالوں کی نسبت جرائم میں بتدریج اضافہ ہو رہا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ پی ایس ایف کے رہنما عبدالمعید کے قاتلوں کو گرفتار کر کے فوری انصاف مہیا کیا جائے ورنہ پیپلز پارٹی کے کارکن پنجاب پولیس اور حکومت کی بدترین پالیسیوں کے خلاف احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے۔