برطانوی ویزے کی خواہشمند بھارتی خاتون کو اچھی انگزیزی بولنا مہنگی پڑ گئی

برطانوی ویزے کی خواہشمند بھارتی خاتون کو اچھی انگزیزی بولنا مہنگی پڑ گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی (آئی این پی)برطانوی ویزے کے حصول کی خواہشمند بھارتی خاتون کو حد سے زیادہ اچھی انگزیزی بولنا مہنگی پڑ گئی ،برطانوی حکام نے خاتون کی ویزے کی درخوات مسترد کردی ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق ایک ہندوستانی خاتون نے دعویٰ کیا ہے کہ برطانوی حکام نے ان کے ویزہ کی درخواست محض اس لیے مسترد کردی کیوں کہ ان کی انگریزی ان کے اسٹینڈرڈ سے زیادہ اچھی تھی اور وہ ایک ایسے ملک سے تعلق رکھتی ہیں، جس کی قومی زبان انگریزی نہیں۔بھارت کی شمال مشرقی ریاست میگھالیہ کے دارالحکومت شیلانگ سے تعلق رکھنے والی الیگزینڈریا رنٹول نے دعوی کیا کہ ان کی جانب سے انٹرنیشل انگلش لینگویج ٹیسٹنگ سسٹم (آئلٹس) کا ٹیسٹ پاس کرنے کے باوجود برطانوی حکام نے ان کے ویزہ کی درخواست مسترد کردی۔انہوں نے اپنے فیس بک اکانٹ پر لمبی چوڑی پوسٹ میں برطانوی حکام کی جانب سے ویزہ مسترد کیے جانے سے متعلق بتایا، ساتھ ہی انہوں نے دعوی کیا کہ انہیں حکام کی جانب سے موصول ہونے والے خط میں کہا گیا کہ ان کی انگریزی آئلٹس کے معیار سے زیادہ بہتر ہے۔الیگزینڈریا رنٹول نے اپنے الیشیا الیشیا نامی فیس بک اکانٹ کی پوسٹ میں دعوی کیا کہ ساتھ ہی برطانوی حکام نے یہ بھی کہا کہ جہاں ان کی انگریزی بہت ہی اچھی ہے، وہیں وہ ایسے ملک سے بھی تعلق نہیں رکھتی جس کی قومی زبان انگریزی ہو۔تاہم دوسری جانب ہندوستان ٹائمز نے برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کا حوالہ دیتے ہوئے اپنی خبر میں بتایا کہ برطانوی حکام کا کہنا ہے کہ بھارتی خاتون نے ویزہ کے لیے دی گئی اپنی درخواست میں مکمل کاغذات جمع نہیں کروائے تھے۔
برطانوی امیگریشن حکام کے مطابق خاتون نے جو آئلٹس کا سرٹیفکیٹ جمع کرایا، وہ اصلی نہیں تھا، لہذا برطانوی ویزے کے لیے انگریزی ٹیسٹ کے اصلی سرٹیفکیٹ سمیت دیگر درکار کاغذات کا جمع کرایا جانا لازمی ہے۔ویزے کے درخواست مسترد ہونے کے بعد خاتون اب اسکاٹ لینڈ کے رکن پارلیمنٹ کے توسط سے برطانیہ کا ویزہ حاصل کرنے کی کوششوں میں مصروف ہے۔اسکاٹ لینڈ کے رکن پارلیمنٹ اسٹیون پی گیتھنز کو بھارتی خاتون کے شوہر اور ان کے دوستوں نے ویزہ جاری کروانے کی درخواست کی تھی۔خیال رہے کہ بھارتی خاتون الیگزینڈریا رنٹول نے اسکاٹ لینڈ سے تعلق رکھنے والے برطانوی نوجوان بوبی رنتول سے رواں برس 2 مئی کو پیار کی شادی کرلی تھی۔بھارتی خاتون نے برطانوی نوجوان سے بنگلورو کے کالج میں کمیونی کیشن اور میڈیا کی تعلیم کے دوران شادی کرلی تھی، برطانوی نوجوان بھارت میں آئل کمپنی میں ملازم تھا۔اب بھارتی خاتون کرسمس منانے کے لیے اپنے شوہر کے پاس جانا چاہتی تھی، تاہم اس کے ویزے کی درخواست مسترد کردی گئی۔الیگزینڈریا رنٹول پہلے بچے کی امید سے ہیں، اور خیال کیا جا رہا ہے کہ اسکاٹش رکن پارلیمنٹ کی مداخلت سمیت بھارتی وزارت داخلہ کی جانب سے تعاون حاصل ہونے کے بعد انہیں ویزہ مل جائے گا۔

مزید :

عالمی منظر -