ایف بی آر کا گیپکوکو بھجوایا گیا24ارب سے زائدکا ایڈوانس ٹیکس نوٹس معطل

ایف بی آر کا گیپکوکو بھجوایا گیا24ارب سے زائدکا ایڈوانس ٹیکس نوٹس معطل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے ایف بی آر کا گیپکو کو بھجوایا گیا 24ارب روپے سے زائد رقم کا ایڈوانس ٹیکس کا نوٹس معطل کرتے ہوئے وفاقی سیکرٹری فنانس، چیئرمین ایف بی آر سے جواب طلب کر لیاہے۔مسٹر جسٹس شمس محمود مرزا نے گوجرانوالہ الیکٹرک سپلائی کمپنی کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے بیرسٹر کاشف رجوانہ نے وفاقی سیکرٹری فنانس، چیئرمین ایف بی آر سمیت دیگر کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ ایف بی آر نے گیپکو کو 11 دسمبر کو 24 ارب 24 کروڑ 62 لاکھ روپے کا ایڈوانس ٹیکس نوٹس بھجوایا ہے اور نوٹس میں 2018ء کیلئے 20 دسمبر تک ایڈوانس ٹیکس ادا کرنے کی ہدایت کی گئی ہے جبکہ ایف بی آر کے گیپکو پر کم از کم ٹیکس عائد کرنے کیخلاف پہلے ہی کیس ہائیکورٹ میں زیر سماعت ہونے پر گیپگو کو بھجوائے گئے نوٹسز پہلے ہی معطل کئے جا چکے ہیں، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ ایف بی آر نے عدالتی حکم کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ایک اور ٹیکس کا نوٹس بھجوایا ہے لہٰذا ایف بی آر کا ایڈوانس ٹیکس کا نوٹس غیر قانونی اور غیر آئینی قرار دے کر کالعدم کیا جائے اور درخواست کے حتمی فیصلے تک ایف بی آر کا ایڈوانس ٹیکس کا نوٹس معطل کیا جائے، عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد ایف بی آر کا گیپکو کو بھجوایا گیا چوبیس ارب روپے سے زائد کا ایڈوانس ٹیکس کا نوٹس معطل کرتے ہوئے وفاقی سیکرٹری فنانس، چیئرمین ایف بی آر سے جواب طلب کر لیاہے۔
نوٹس معطل

مزید :

علاقائی -