عربی زبان سیکھنا ہر مسلمان پر لازم، قرآن وحدیث کو سمجھنے کیلئے عربی زبان پر عبور ضروری ہے: حبیب اللہ بخاری

عربی زبان سیکھنا ہر مسلمان پر لازم، قرآن وحدیث کو سمجھنے کیلئے عربی زبان پر ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(صباح نیوز) پاکستان میں قائم مقام سعودی سفیر حبیب اللہ بخاری نے کہا ہے کہ سعودی عرب پاکستان میں عربی زبان کے فروغ کے لیے مزید مراکز قائم کرئے گا، قرآن وحدیث کو سمجھنے کے لیے عربی زبان پر عبورضروری ہے ۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے عربی زبان کے عالمی دن پر سعودی سفارت خانہ میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سیمینارکا انعقادپاکستان میں سعودی عرب کے ادارہ برائے ثقافت نے کیاتھا۔ قائم مقام سفیر حبیب اﷲ بخاری نے کہا کہ سعودی عرب عربی زبان کے فروغ کے لیے پوری دنیا میں کام کررہا ہے اور شاہ سلمان بن عبد العزیز ان پروگراموں میں خاصی دلچسپی لے رہے ہیں، عربی زبان کے فروغ اور ترویج کے لئے سعودی عرب میں کنگ عبداﷲ بن عبد العزیز سنٹر کام کررہا ہے جس سے اب تک آٹھ سو سکالر فارغ التحصیل ہو چکے ہیں اورپوری دنیا میں عربی زبان کی ترویج اور اشاعت کے لیے کام کررہے ہیں اور عربی زبان و ادب پر کتابیں بھی لکھ ر ہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ عربی زبان پر عبور کے بغیر کو ئی بھی اﷲ کے احکامات اور رسول اکرم ؐ کے فرمان کو سمجھ نہیں سکتا ہے اس لئے عربی زبان کا علم حاصل کرنا ہر مسلمان کے لیے ضروری ہے۔سعودی عرب کی سرکاری زبان عربی ہے اور پوری دنیا میں عربی کی ترویج کے لئے کوشاں ہے۔ پاکستان میں عربی زبان پر مسلم لیگ کے پہلے دور میں کام ہوا پاکستان کے سابق صدر جنرل ضیاء الحق کے دور میں عربی زبان کو ضروری قرار دیا تھا مگر سابق صدر جنرل پرویز مشرف کے دور میں عربی زبان کو اختیاری کر دیا گیا ۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے اسلامیہ یونیورسٹی کے شعبہ عربی کے سربراہ انعام الحق غازی نے کہا کہ عربی زبان کی برصغیر میں ترویج تین ہزار سال پرانی ہے اور ہر دور میں عربی زبان کے فروغ کیلئے کوششیں کی گئی ہیں ۔ کفایت اﷲ سربراہ شعبہ عربی زبان نمل یونیورسٹی نے کہا کہ پاکستان کی تمام سرکاری جامعات میں عربی زبان کے شعبے موجود ہیں ،عربی کے فروغ میں دینی مدارس کا اہم کردار ہے۔ سیمینار سے سعودی عرب کے پاکستان میں ادارہ ثقافت برائے پاکستان کے سربراہ علی بن محمد ھوساوی ،عبد الرحمن محمد بشیر و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

صفحہ آخر -