بھارتی دھمکیوں کے باعث خطے میں ایٹمی جنگ چھڑ سکتی ہے :ناصر جنجوعہ

بھارتی دھمکیوں کے باعث خطے میں ایٹمی جنگ چھڑ سکتی ہے :ناصر جنجوعہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ،آن لائن) مشیر قومی سلامتی ناصر جنجوعہ نے دنیا بھر کو متنبہ کیا ہے کہ بھارت مسلسل پاکستان کو مستقل طور پر روایتی جنگ کی دھمکی دے رہا ہے جس سے خطے میں ایٹمی جنگ چھڑ سکتی ہے ،امریکہ بھی بھارت کی زبان بول رہا ہے اور سی پیک کی مخالفت کر رہا ہے ۔ امریکہ بھارت دونوں نے کشمیر پر گٹھ جوڑ کیا ہوا ہے جنوبی ایشیا کی سلامتی سخت دباؤمیں ہے ، پاکستان کے نیوکلیئر پروگرام کو خطرہ قرار دیا جارہا ہے ۔ دنیا دہشتگردی کے خلاف پاکستان کی جنگ کو قدر کی نگاہ سے نہیں دیکھتی آج ہر جگہ مسلمان جنگوں کا شکار ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار ناصر جنجوعہ نے وفاقی دارالحکومت میں نیشنل سکیورٹی پالیسی سیمینار کی تقریب سے خطاب کے دوران کیا ۔ انہوں نے کہا کہ نائن الیون کے بعد ہم نے پاکستان میں کیا بہتر کنٹرول نہیں سنبھالا ؟ فاٹا کی آٹھ ایجنسیاں ہیں، کراچی پاکستان کا معاشی حب ہے بلوچستان پاکستان کا صوبہ ہے کیا وہاں پر ہم نے دہشتگردی ختم نہیں کی؟ آج فاٹا اور کراچی میں دہشتگردی کا خاتمہ کر دیا ہے ۔ بلوچستان میں بھی آج جیوے جیوے پاکستان کے نعرے لگ رہے ہیں ہم نے دہشتگردی کے خلاف بے پناہ قربانیاں دی لیکن دنیا ہماری ان قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے نہیں دیکھتی ۔ انہوں نے کہا کہ آج پاکستان میں بچے کچے مٹھی بھر شرپسند عناصر ہتھیار ڈال رہے ہیں اور اپنے آپ کو قانون نافذ کرنے والے اداروں کے حوالے کر رہے ہیں ۔ناصر جنجوعہ نے کہا کہ امریکہ افغانستان میں شکست کا الزام پاکستان پر لگا رہا ہے اور کہہ رہا ہے کہ پاکستان حقانی نیٹ ورک اور طالبان کا ساتھ دے رہا ہے جبکہ پاکستان میں دہشت گردی امریکااورمغرب کاساتھ دینے پرہوئی، لیکن حقیقت میں امریکہ خود افغانستان میں جنگ ہار چکا ہے اور اسی لئے افغانستان میں طالبان مزید مضبوط ہو رہے ہیں۔پاکستان نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں بھاری مالی اور جانی نقصان اٹھایا ہے لیکن بدقسمتی سے دنیا دہشتگردی کے خلاف پاکستان کی جنگ کو قدر کی نگاہ سے نہیں دیکھتی ۔ ناصر جنجوعہ نے کہا کہ بھارت مسلسل ہتھیاروں کا ذخیرہ کر رہا ہے جس سے جنوبی ایشیاء کی سلامتی کو خطرہ لا حق ہے ۔ اس کے علاوہ بھارت مسلسل پاکستان کو مستقل طور پر روایتی جنگ کی بھی دھمکی دے رہا ہے جس سے خطے میں ایٹمی جنگ چھڑ سکتی ہے لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ امریکہ بھی بھارت کی ہی زبان بول رہا ہے اور سی پیک کی مخالفت کر رہا ہے لیکن سچ تو یہ ہے کہ امریکہ خطے میں بڑھتے ہوئے چین کا اثرورسوخ کو کم کرنا چاہتا ہے، ناصر جنجوعہ کا کہنا تھا کہ افغانستان میں طالبان مزید مضبوط ہورہے ہیں، بھارت ہتھیاروں کا ذخیرہ کررہا ہے، چین اور روس سے مقابلے کے لیے امریکا خطے میں عدم توازن پیدا کررہا ہے، انہوں نے کہا کہ امریکہ اور بھارت نے کشمیر پر گٹھ جوڑ کیا ہوا ہے اور دونوں ملکوں کا کشمیر پر ایک ہی موقف ہے لیکن پاکستان بھی تمام تر حالات سے آگاہی رکھتا ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان کے جوہری پروگرام کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ ہمارا نیوکلیئر پروگرام خطرے میں ہے ۔ جس کی سازش سے بہتر آگاہ ہیں ۔ ناصر جنجوعہ نے کہا کہ آج بدقسمتی سے مسلمان ہر جگہ جنگ کا شکار ہیں۔