بس ریپڈ ٹرانزٹ کے منصوبے میں تاخیر کسی صورت برداشت نہیں کی جائیگی :ایڈیشنل چیف سیکرٹری

بس ریپڈ ٹرانزٹ کے منصوبے میں تاخیر کسی صورت برداشت نہیں کی جائیگی :ایڈیشنل ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور( سٹاف رپورٹر)پشاور بس ریپڈ ٹرانزٹ صوبے کی تاریخ کا ایک بڑا اوراہم عوامی منصوبہ ہے ۔اس لئے تعمیراتی کام اوربروقت تکمیل پرکوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ اس عزم کا اظہار ایڈیشنل چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا ڈاکٹر شہزاد بنگش نے پیر کے روز سول سیکرٹریٹ پشاورمیں بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے ( بی ۔آر۔ٹی )کی نگران کمیٹی کے اجلاس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں دوسروں کے علاوہ سیکرٹری پی اینڈ ڈی ،سیکرٹری ٹرانسپورٹ ،سیکرٹری اطلاعات وتعلقات عامہ ،ڈپٹی کمشنر پشاور، ایس ایس پی ٹریفک اورپشاور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کے حکام نے شرکت کی۔ اجلاس میں مذکورہ منصوبے پرتعمیراتی کام کی رفتار ،اخراجات،حفاظتی اقدامات ،ٹریفک کی بلاتعطل روانی اورمنصوبے سے متعلق عوامی آگاہی جیسے اقدامات پرتفصیلی غوروعوض ہوا۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری نے منصوبے کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے متعلقہ حکام کوہدایت کی کہ وہ اس پر تعمیراتی کام کی رفتار کو نہ صر ف تیز کریں بلکہ منصوبے کے اعلیٰ معیار کو بھی یقینی بنائیں کیونکہ یہ شہرکے گنجان آباد علاقوں سے گزر رہا ہے اس لئے منصوبے کے دونوں اطراف حفاظتی اقدامات اور ٹریفک کی روانی کا خاص طورپر خیال رکھا جائے اور منصوبے پرکام کے دوران کاروباری حضرات، مقامی آبادی اورراہگیروں کو کسی دقت کاسامنا نہ کرنا پڑے۔ انہوں نے کہا کہ منصوبے کی تعمیر وتکمیل کے لئے اکثر مقامات پرگہری کھدائی کے لئے بڑی بڑی مشینریوں کااستعمال ہورہا ہے اس لئے منصوبے کے دونوں اطراف عارضی حفاظتی لوہے کے دیواریں کھڑی کی جائیں تاکہ کسی بھی ممکنہ جانی نقصان سے بچاجاسکے۔ ٹریفک حکام نے ٹریفک کے نظام کو رواں دواں رکھنے کی منصوبہ بندی سے متعلق اجلاس کو آگاہ کیا ۔انہوں نے کہا کہ ٹریفک کے نظام کو رواں دواں رکھنے اور رش کے مسئلے سے نمٹنے کے لئے اضافی نفری تعینات کردی گئی ہے اورایمرجنسی کی صورت میں اضافی نفری بھی 24 گھنٹے آن کال رکھی گئی ہے۔ اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات وتعلقات عامہ قیصر عالم نے اجلاس کو بتایا کہ اس منصوبے کی اہمیت اورافادیت کو اُجاگر کرنے کے لئے محکمہ ابلاغ عامہ کے تمام ممکنہ ذرائع تندہی کے ساتھ استعمال کئے جارہے ہیں تاکہ منصوبے کے ثمرات وفوائد کو اُجاگر کرتے ہوئے اس کے لئے عوامی تعاون اورحمایت کے حصول کو یقینی بنایا جاسکے اور عوام منصوبے پر ہونے والے کام کی رفتار سے بھی بخوبی آگاہ ہوسکیں۔