گزشتہ کھلی کچہریوں میں عوام کے90فیصد مسائل ہوئے ،اے اے سی

گزشتہ کھلی کچہریوں میں عوام کے90فیصد مسائل ہوئے ،اے اے سی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور( سٹاف رپورٹر) ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر کوہاٹ صاحبزادہ سمیع اللہ نے پیرکوڈپٹی کمشنر کوہاٹ خالد الیا س کی ہدایت پریونین کونسل استرزئی میں کھلی کچہری کا انعقاد کیاجس میں ناظم یونین کونسل استرزئی ظہیر عباس اور دوسرے منتخب نمائندوں، سرکاری محکموں کے سربراہوں اور عوام کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔صاحبزادہ سمیع اللہ نے کھلی کچہری کے اغراض و مقاصد کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ کھلی کچہریوں کے نتائج انتہائی حوصلہ افزاء ہیں ان میں پیش کردہ عوام کے تقریباً90فیصد مسائل ہوئے ہیں اور انشاء اللہ اس کچہری کے بھی حسب توقع نتائج آئیں گے۔ان کا کہنا تھاکہ ان کھلی کچہریوں میں ماضی کے برعکس یہاں پر کئے گئے ہر فیصلے کا باقاعدہ فالو اپ کیا جاتاہے اور مکمل ڈائری کی شکل میں اس کی رپورٹ اعلیٰ حکام کو بھی دی جاتی ہے اور متعلقہ ادارے پیش رفت دریافت آگاہ کرتے ہیں۔ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر نے واضح کیا کہ کھلی کچہریوں میں فیصلوں پر عملدرآمد نہ کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا اور عملدرآمد کرنے والوں سے نہ صرف باز پرس کی جاتی ہے بلکہ حکم عدولی کی صورت میں ایکشن بھی لیا جاتاہے۔ان کا کہنا تھا کہ یہ بات حوصلہ افزاء ہے کہ یونین ناظم، منتخب نمائندوں اور عوام نے دل کھول کر اپنے انفرادی و اجتماعی بنیادی مسائل موثر انداز میں پیش کرنے کے علاوہ ان کے حل کے لئے مثبت تجاویز بھی دیں ۔انہوں نے استرزئی یونین کونسل کا ملحقہ قبائیلی علاقے اور دوسرے یونین کونسلوں کے ساتھ حدبراری کا مسئلہ مستقل طور پر حل کرنے کے لئے منگل کے روز اپنے دفتر میں متعلقہ حکام اور منتخب نمائندوں اور عمائدین کا مشترکہ اجلاس طلب جبکہ استرزئی بالا اور پایاں میں انڈرپاسز کی تعمیر کا مسئلہ پختونخوا ہائی وے اتھارٹی کے ساتھ اٹھانے کا بھی یقین دلایا۔صاحبزادہ سمیع اللہ نے تعلیم اور صحت کے شعبوں میں خالی آسامیوں کو پر کرنے کے لئے فوری طور پر متعلقہ حکام کو نئے کیسز بھجوانے کی ہدایت کی۔عوام کے زیادہ تر مسائل کا تعلق بجلی ،تعلیم،صحت ، زراعت اور صفائی سے تھا جن کے حل کے لئے متعلقہ حکام کو موقع پر احکامات جاری کردیئے گئے