جندول تحصیل منڈا کے کٹیگری ڈی ہسپتال میں ٹیسٹ لیبارٹری کی رقم میں خورد برد کا انکشاف

جندول تحصیل منڈا کے کٹیگری ڈی ہسپتال میں ٹیسٹ لیبارٹری کی رقم میں خورد برد ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


جندول (نمائندہ پاکستان) سب ڈویژن جندول تحصیل منڈا کے کٹیگری ڈی ہسپتال میں ٹیسٹ لیباٹری کی رقم میں خوردبرد کا انگشاف ہوا ہے جبکہ کئی سالوں سے لاکھوں روپے مالیت کی ٹیسٹ مشین خراب پڑی ہے ، کلاس فور اور دیگر سٹاف ہسپتال میں نظر نہیں آتا ، کئی کلاس فور ملازیم اپنی ڈیوٹی سے اکثر غیرحاضر رہتاہے، ہسپتال میں کوئی پوچھنے والا نہی، کئی ڈاکٹرزاور کلاس فور ملازمین اکثر غیرحاضررہتے ہے، جب کوئی پوچھنے والا آجاتا ہے تو پھر ایک دوسرے کو کال کرکے بولاتا ہے ، تفصلات کے مطابق تحصیل منڈا کی کٹگری ڈی ہسپتال ٹیسٹ لیباٹری کی ایک ماہ کے تین ٹیسٹو ں میں ایچ سی وی ، ایچ ڈی ایس اور ایچ پی لوری، کی رقم میں انتالیس ہزار کا خوربرد کا انگشاف ہوا ہے ،جب لیباٹری کے انچارج سے پوچھا گیا تو لیباٹری کی نچارج غلام محمد نے کہا، کہ لیبارٹری کاسارا سامان اپنے مداد آپ کے تحت لیتاہوں حکومت نے اب تک لیبارٹری کیلئے کوئی سامان نہیں دیا لوگوں سے ٹیسٹ کا رقم لیتا ہو اور لوگوں پر خرچ کرتا ہو ،مزید ہسپتال میں ٹوٹل سٹاف آسی کے قریب ہے ، جس میں چھبیس ڈاکٹرز، ایک لیڈی ڈاکٹر،دو ایل ایچ وی، سمیت تیس کلاس فورملازمین بھی ڈیوٹی سرانجام دیتے ہیں جو اکثر غیرحاضر اور اپنے گھر کے کاموں میں مصروف رہتے ہیں اور ایک دوسرے کی اٹینڈس لگا کرتنخوا ہ وصول کرتے ہیں اور جب کوئی پوچنے والے آجاتے ہیں تو ڈیوٹی پر موجود ملازمین غیرحاضر ملازمین کو اس وقت کال کرکے بولاتے ہیں،جب انچارج ڈاکٹر شفع اللہ سے پوچھاگیاتو انہوں نے کہا کہ ہمارے ساتھ لیڈی سٹاف کی کمی ہے ہمارے سٹاف کے کئی افراد دوسرے ہسپتالوں میں کام کرتے ہیں اس لئے سٹاف کی کمی ہے اور جو سٹاف غیر حاضر رہتے ہیں تو کئی بار انکے خلاف ڈی ایچ کیو ں کو بروقت لیٹر اور مسائل سے اگاہ کیا ہے مگر اب تک کسی کے خلاف قانونی کاروائی نہیں ہوا ، انھوں سنے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ ہسپتال میں لیڈی ڈاکٹرز کی کمی کو پورہ کریں،