امریکا ڈرون حملوں کے متاثرین کو امداد دے، سینیٹ میں قرارداد منظور

امریکا ڈرون حملوں کے متاثرین کو امداد دے، سینیٹ میں قرارداد منظور
امریکا ڈرون حملوں کے متاثرین کو امداد دے، سینیٹ میں قرارداد منظور

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ویب ڈیسک)سینیٹ نے امریکی حکومت سے ڈرون حملوں کے متاثرین کے لیے معاوضہ طلب کرنے کی قرارداد منظور کرلی۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق سینیٹ کا اجلاس چیئرمین رضا ربانی کی زیرصدارت شروع ہوا جس میں مختلف قرارداد پیش کی گئیں، ایوان بالا نے سینیٹر سحر کامران کی جانب سے پیش کی گئی قرارداد کی منظوری دی جس میں کہا گیا کہ حکومت نے جتنے بھی بین الاقوامی کنونشنز، معاہدوں  اور وعدوں پر دستخط یا منظور کیے ہیں ان سب کو پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں پیش کیا جائے۔

ایوان بالا نے ڈرون حملوں کے متاثرین کا امریکی حکومت سے معاوضہ طلب کرنے کی قرارداد بھی منظور کی جو مسلم لیگ (ن) کے سینیٹرمحمد جاوید عباسی نے پیش کی تھی جس میں کہا گیا کہ آیا یہ حقیقت ہے کہ امریکا کی حکومت ان ممالک سے جنہوں  نے شہریوں کی جان اور املاک کو نقصان پہنچایا معاوضہ طلب کر رہی ہے، آیا یہ بھی حقیقت ہے کہ پاکستان میں  سال 2000ء سے ہونے والے امریکی ڈرون حملوں میں پاکستان کے معصوم شہریوں کی جان اور املاک کا نقصان ہوا ہے۔

قرارداد میں کہا گیا کہ ایوان سفارش کرتا ہے کہ حکومت پاکستان میں سال 2000ء سے شروع ہونے والے ڈرون حملوں میں  ہونے والی معصوم شہریوں کی ہلاکت اور املاک کے نقصانات کا معاوضہ امریکی حکومت سے طلب کرے، علاوہ ازیں یہ ایوان زور دیتا ہے کہ اس قرارداد کی کاپی اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی، نیٹو، یورپی یونین، دولت مشترکہ اور اے پی اے کے رکن ممالک کو بھیجے تاکہ ڈرون کے متاثرین کو ہونے والے معاشرتی، معاشی اور نفسیاتی اثرات کو نمایاں  کیا جا سکے۔

دوسری جانب سینیٹر کریم احمد خواجہ کی جانب سے قرارداد پیش کی گئی جس میں کہا گیا کہ ایوان سفارش کرتا ہے جو افراد تقسیم کے وقت یا اس کے بعد پاکستان کو چھوڑ گئے اور دوسرے ممالک میں سکونت اختیار کی اور وہ اپنے وطن میں مذہبی یا سیر و تفریح کی غرض سے آنا چاہیں یا ملک میں سرمایہ کاری یا کوئی تجارت کرنا چاہیں  تو حکومت کو چاہیے کہ انہیں سہولیات فراہم کرے، جس پر ایوان نے یہ قرارداد بھی منظور کرلی۔

مزید :

قومی -