حلقہ بندیوں سے متعلق آئینی ترمیم کا بل سینٹ نے منظور کر لیا

حلقہ بندیوں سے متعلق آئینی ترمیم کا بل سینٹ نے منظور کر لیا
حلقہ بندیوں سے متعلق آئینی ترمیم کا بل سینٹ نے منظور کر لیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) نئی مردم شماری کے تحت حلقہ بندیوں سے متعلق آئینی ترمیمی بل2017 سینیٹ سے منظور ہو گیا،سینیٹ میں پیش ہونے والے بل کے حق میں 84 ووٹ ڈالے گئے جب کہ مخالفت میں صرف ایک ووٹ پڑا، آئینی ترمیمی بل کی منظوری کے بعد پنجاب کی قومی اسمبلی کے لئے خواتین کی 2 مخصوص نشستوں سمیت 9 نشستیں کم ہو جائیں گی جب کہ سندھ کی موجودہ نشستیں برقرار رہیں گی، اسی طرح خیبر پختوانخوا کی ایک مخصوص نشست سمیت 5، بلوچستان کی ایک مخصوص نشست سمیت 3اور وفاقی دارلحکومت کی ایک نشست کا اضافہ ہو گا۔

جب تک ہم ایک ہیں ہمیں کوئی شکست نہیں دے سکتا،پاکستان کو لاحق خطرات کا مل کر مقابلہ کریں گے: میجر جنرل آصف غفور

تفصیلات کے مطابق چیرمین سینیٹ رضا ربانی کی سربراہی میں سینیٹ کا اجلاس جاری ہے جس میں وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب نے حلقہ بندیوں سے متعلق آئینی ترمیم بل پیش کیا، ایوان بالا میں حلقہ بندیوں سے متعلق بل کی شق وار منظوری کی گئی۔بل قومی اسمبلی سے منظوری کے بعد گزشتہ ماہ سینیٹ کے اجلاس میں پیش کیا جانا تھا۔سینیٹ کے گزشتہ اجلاسوں میں آئینی ترمیمی بل کو چار مرتبہ ایجنڈا میں شامل کیا گیا تھا لیکن پاکستان پیپلز پارٹی کے تحفظات کے باعث پیش نہیں کیا جا سکا۔
دوسری جانب وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے گزشتہ دنوں اپوزیشن رہنماو¿ں سے ملاقات کی تھی جس میں حلقہ بندیوں سے متعلق بل پر ڈیڈ لاک ختم کرکے اسے آج سینیٹ میں پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔وزیر اعظم کی زیر صدارت پارلیمانی لیڈرز کے اجلاس میں حکومت نے پاکستان پیپلز پارٹی کے مطالبات تسلیم کیے جس کے تحت مردم شماری کے پانچ فیصد بلاکس کی دوبارہ تصدیق کروائی جائے گی، یہ کام تیس دن کے اندر مکمل کر لیا جائے گا۔واضح رہے کہ آج کے اجلاس کے لیے پاکستان پیپلز پارٹی اور دیگر جماعتوں نے اپنے ممبران کی حاضری کویقینی بنانے کی ہدایت جاری کردی ہیں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -