”میں 17سال کا تھا جب اس چیز نے مجھے کنوارے پن سے محروم کر دیا، یہ کوئی انسان نہیں تھا اور تب سے مسلسل آج تک۔۔۔“ 74سالہ آدمی نے تصویر بنا کر ایسی بات کہہ دی کہ دنیا بھر کے انسانوں کے ہوش اڑا دیئے

”میں 17سال کا تھا جب اس چیز نے مجھے کنوارے پن سے محروم کر دیا، یہ کوئی انسان ...
”میں 17سال کا تھا جب اس چیز نے مجھے کنوارے پن سے محروم کر دیا، یہ کوئی انسان نہیں تھا اور تب سے مسلسل آج تک۔۔۔“ 74سالہ آدمی نے تصویر بنا کر ایسی بات کہہ دی کہ دنیا بھر کے انسانوں کے ہوش اڑا دیئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) انسانوں کی اکثریت تاحال خلائی مخلوق کے وجود پر ہی یقین نہیں رکھتی لیکن ایک امریکی شخص نے ان مخلوقات سے استوار اپنے رشتو ںناطوں کے متعلق ایسا دعویٰ کر دیا ہے کہ دنیا بھر کے ہوش اڑا دیئے ہیں۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق امریکی ریاست نیوجرسی کے شہر ہوبوکن کے 74سالہ ڈیوڈ ہوگنز نے بتایا ہے کہ وہ تمام عمر خلائی مخلوق سے نہ صرف ملتا رہا ہے بلکہ خلائی مخلوق کی خواتین اس کے ساتھ جنسی تعلق بھی استوار کرتی رہی ہیں۔ ڈیوڈ نے بتایا کہ ”اس وقت میری عمر صرف8سال تھی جب میری پہلی بار خلائی مخلوق سے ملاقات ہوئی۔ تب میں جارجیا میں اپنے والدین کے ساتھ فارم پر رہتا تھا۔ 9سال تک خلائی مخلوق کے افراد مجھ سے ملاقاتیں کرتے رہے اور1950ءکی دہائی میں جب میری عمر 17سال کی تھی تب خلائی مخلوق کی ایک خاتون نے میرے ساتھ جنسی تعلق قائم کیا۔ یہ میرا زندگی میں پہلا جنسی تعلق تھا۔اس روز میں فارم کے جنگل نما حصے میں گھوم رہا تھا کہ وہاں اس نے مجھے برہنہ کرکے زمین پر لٹا دیا اور میرا کنوار پن ختم کر دیا۔ اس خاتون کا نام کریسنٹ تھا۔“


ڈیوڈ نے خلائی مخلوق کے ساتھ ملاقاتوں کی تصاویر بھی بنائی ہیں جن میں خلائی مخلوق کی خواتین کو اس کے ساتھ جنسی تعلق استوار کرتے بھی دیکھا جا سکتا ہے۔ڈیوڈ نے دعویٰ کیا ہے کہ 17سال کی عمر سے اب تک خلائی مخلوق کی کئی خواتین میرے ساتھ جنسی تعلق استوار کر چکی ہیں اور میں ان کے سینکڑوں بچوں کا باپ بن چکا ہوں۔ انہوں نے مجھے ایک بار ایک کمرہ دکھایا جس میں سینکڑوں بچے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ تمہارے بچے ہیں۔ میں نے ان بچوں کو چھوا جس سے میری توانائی ان میں منتقل ہو گئی۔“


رپورٹ کے مطابق ڈائریکٹر بریڈ ابراہمز ، ڈیوڈ کی اس کہانی پر ڈاکومنٹری فلم بنانے جا رہے ہیں۔ انہوں نے ڈیوڈ کے بیٹے، اس کے باس اور ہمسایوں سے ملاقاتیں کی ہیں۔ ڈیوڈ کے باس نے بریڈ کو بتایا کہ ”میرے خیال میں ڈیوڈ جھوٹ نہیں بول رہا تاہم اس کے اس دعوے کا میرے پاس کوئی جواب نہیں۔“ ڈیوڈ کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ ”اب تک میں اس معاملے پر اس لیے خاموش رہا کیونکہ میں جانتا تھا کہ کوئی بھی میرا اعتبار نہیں کرے گا اور میں اسے ثابت بھی نہیں کر پاﺅں گا لیکن اب میں اس ڈاکومنٹری کے لیے سب کچھ بیان کر رہا ہوں۔ مجھے امید ہے کہ یہ ڈاکومنٹری لوگوں کے ذہن کھولے گی اور خلائی مخلوق کے وجود کے متعلق مذاکرے پر آمادہ کرے گی۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -