ڈاکٹر صبح سے شام تک عدالت میں بیٹھے ہوتے ہیں، حکومت مسائل حل کیو ں نہیں کرتی: پشاور ہائیکورٹ

ڈاکٹر صبح سے شام تک عدالت میں بیٹھے ہوتے ہیں، حکومت مسائل حل کیو ں نہیں کرتی: ...

  



پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) پشاورہائیکورٹ نے خیبرپختونخوا حکومت کو ڈاکٹروں کے مسائل حل کرنے کی ہدایت کر دی۔پشاور ہائیکورٹ میں ڈاکٹروں سے متعلق کیس کی سماعت میں عدالت نے صوبائی حکومت کو ڈاکٹروں کے مسائل حل کرنے کی ہدایت جاری کی۔ جسٹس قیصر رشید کا ریمارکس میں کہنا تھا کہ ڈاکٹر صبح سے شام تک عدالت میں بیٹھے ہوتے ہیں، حکومت مسائل کیوں حل نہیں کرتی۔جسٹس قیصر رشید نے کہا کہ حکومت کو پتہ ہے ہسپتالوں میں کیا ہو رہا ہے، ڈاکٹروں کے مسائل حل کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے، حکومت کا صحت ایجنڈا کیا ہے آپ اس سے واقف ہیں۔ ایڈوکیٹ جنرل نے عدالت کو بتایا کہ ڈاکٹر ہسپتال کی بجائے بغیر چھٹی کے یہاں آکر دن گزارتے ہیں، ایسے ڈاکٹروں کے خلاف حکومت ایکشن لے گی۔جسٹس قیصر نے کہا کہ آپ ایکشن لینا چاہتے ہیں تو وہاں پر لیں، ڈاکٹر عدالت میں سائلین بن کر آتے ہیں، عدالت سے نہیں نکال سکتے، تمام ڈاکٹروں کے مسائل حل کریں تاکہ وہ ہسپتال میں کام کریں۔

، مسائل حل کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

پشاور ہائیکورٹ

مزید : علاقائی