پرویز مشرف کوسزا کیخلاف مختلف شہروں میں شہر ی سراپا احتجاج

        پرویز مشرف کوسزا کیخلاف مختلف شہروں میں شہر ی سراپا احتجاج

  



لاہور،چیچہ وطنی،فقیروالی،نارووال،شورکوٹ،سبی (لیڈی رپورٹر،نمائندگان) سابق صدر وآرمی چیف جنرل (ر)پرویز مشرف کیخلاف آنے والے فیصلے پر مختلف شہروں میں شہری سراپا احتجاج،نعرے بازی۔تفصیلات کے مطابق پنجاب یونیورسٹی میں وائس چانسلر ڈاکٹر نیاز احمد کی زیر قیادت پاک فوج سے اظہار یکجہتی کیلئے ریلی نکالی گئی۔ ریلی میں پرووائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر سلیم مظہر، فیکلٹیوں کے ڈینز، صدور شعبہ جات، اساتذہ اور طلباء و طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ ریلی میں شرکاء نے پاک فوج کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کرنے کے لئے بینرز اٹھا رکھے تھے۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر ڈاکٹر نیاز احمد نے کہا کہ پاک فوج کی قربانیوں کے باعث آج عوام اور پاکستان کے تمام شعبے آزادی کی سانس لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاک آرمی دنیا کی نمبر ون آرمی ہے جس نے ملک کی سرحدوں کی حفاظت کے ساتھ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربانیاں دے کر ملک میں امن بھی قائم کیاہے۔سول سوسائٹی چیچہ وطنی کے زیر اہتمام سابق صدر پاکستان جنرل پرویز مشرف کی سزاکے خلاف اور پاک فوج کے حق میں ریلی نکالی گئی جو کالج چوک سے شروع ہو کر مختلف بازاروں سے ہوتی ہوئی چیچہ وطنی پریس کلب پہنچی، جہاں مقررین سابق چیئرمین یونین کونسل چوہدری ساجد بشیر، چیئرمین یونین کونسل چوہدری بشارت گیلانی،سابق وائس چیئرمین رانا عبداللطیف،  چیئرمین امن کمیٹی پنجاب لیاقت علی بوبک، جنرل سیکرٹری مرکزی انجمن تاجران محمد آصف سعید، چوہدری محمد منشاء جٹ سمیت دیگر مقررین نے خطاب کیا۔فقیروالی میں عدالتی فیصلے پر بنگلہ روڈ کے تاجروں نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے پرویزمشرف کے حق میں ریلی نکالی اور نعرے بازی کی گئی ریلی کے شرکاء نے  پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پرسابق صدر جنرل پرویزمشرف کی سزا نا منظور اور اسحاق ڈار کو واپس لاؤ کے جملے آویزاں تھے۔چوک ظفروال بائی پاس میں بھی پرویز مشرف کیخلاف آنیوالے فیصلے پرسول سوسائٹی نے پر احتجاجی مظاہرہ کیا،شورکوٹ اور سبی میں بھی شہر کے عوامی وسماجی حلقوں اوررکشہ ڈرائیوروں نے عدالت کی طرف سے سابق صدر جنر ل پرویز مشر ف کودی جانیوالی سزا کے خلاف ریلی نکالی۔

احتجاج 

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) ایمنسٹی انٹرنیشنل نے سابق صدر پرویز مشرف کی سزا پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں ہو سکتا لیکن کسی کو بھی سزائے موت دینا درست نہیں ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل نے سابق صدر پرویز مشرف کو سزائے موت دینے کے فیصلے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سزائے موت ظالمانہ، سغیر انسانی اور ہتک آمیز سزا ہے۔ سزائے موت کا مطلب انتقام ہے نہ کہ انصاف۔ایمنسٹی انٹرنیشنل جنوبی ایشیا کے ڈپٹی ڈائریکٹر عمر وڑائچ کا کہنا ہے کہ سابق صدر پرویز مشرف کے ساتھ ان کی حکومت میں رہنے والے دیگر افراد کو بھی اپنے دور میں ہونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا جواب دینا ہوگا۔ کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں لیکن سزائے موت ایک ظالمانہ فیصلہ ہے جس کی سخت مذمت کرتے ہیں۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل 

مزید : صفحہ اول