کاشانہ سکینڈل، خود مختارکمیٹی بنانے کیلئے دائر درخواست پروکلاء فریقین بحث کیلئے طلب

کاشانہ سکینڈل، خود مختارکمیٹی بنانے کیلئے دائر درخواست پروکلاء فریقین بحث ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے کاشانہ دارالامان سکینڈل کی تحقیقات کے حوالے سے خود مختار کمیٹی بنانے کیلئے دائر درخواست پرفریقین کے وکلاء کو آئندہ سماعت پربحث کے لئے طلب کرلیا۔جسٹس ملک شہزاد احمد خان نے مجید غوری کی درخواست پر سماعت کی،دوران سماعت سابق سپرنٹنڈنٹ افشاں لطیف نے عدالت کو بتایا کہ بچیوں کی چھوٹی عمرمیں زبردستی شادیاں کی جاتی ہیں،شفاف تحقیقات کے لئے جوڈیشل کمیشن بنانے کا حکم دیا جائے، دارالامان میں آنے والی بچیوں کوتحفظ دیناریاست کی بنیادی ذمہ داری ہے،افشاں لطیف کاکہناہے کہ انہوں نے کاشانہ دارالامان کو دن رات محنت کرکے ماڈل ویلفیئر ہوم بنایا، سابق وزیر سوشل ویلفیئر اجمل چیمہ کی کم عمر بچیوں کی شادیاں کروانے سے بھی انکار کیا،غیر قانونی کام کرنے سے انکار کرنے پرہراساں کیا گیا، معاملے کی انکوائری کے لئے غیر جانبدار کمیٹی بنائی جائے،جس میں آئی ایس آئی کے نمائندے کو بھی شامل کیا جائے، کاشانہ دارالامان میں موجود لڑکیوں پر غیر ضروری پابندیاں ختم کرنے اور ہراساں نہ کرنے کا حکم دیا جائے اورکاشانہ دارالامان کی تمام بچیوں کو میڈیا تک رسائی دی جائے، معاملے کی انکوائری تک کاشانہ دارلامان کا انتظامی کنٹرول کسی غیر جانبدار شخص کے حوالے کیا جائے۔اس کیس کی مزید سماعت24دسمبر کو ہوگی۔

کاشانہ سکینڈل

مزید : صفحہ آخر