چینی کمپنیوں کا پاکستان میں مشترکہ منصوبوں میں اظہار دلچسپی 

      چینی کمپنیوں کا پاکستان میں مشترکہ منصوبوں میں اظہار دلچسپی 

  



اسلام آباد (کامرس ڈیسک) چین کی کمپنیوں کے ایک وفد نے  یانگ ینگ کی قیادت میں اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کیا اور انفارمیشن ٹیکنالوجی، رئیل اسٹیٹ، شمسی توانائی، بینکنگ و فنانس اور سائبر سیکورٹی و پرنٹنگ سمیت دیگر شعبوں میں پاکستان کی تاجر برادری کے ساتھ جوائنٹ وینچرز اور بزنس پارٹنرشپ قائم کرنے میں دلچسپی کا اظہار کیا۔ سنیٹر میاں عتیق، فیڈریشن کے نائب صدر محمد اعجاز عباسی اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔چینی وفد کے نمائندگان نے کہا کہ یہ ان کا پاکستان کا پہلا دوسرا ہے اور کہا کہ وہ چین کی مزید کمپنیوں کو پاکستان لانے کی کوشش کریں گے تاکہ وہ یہاں کاروبار کے مواقع تلاش کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کی کمپنیاں دنیا کے کئی ممالک کے ساتھ کاروبار کر رہی ہیں اور اب وہ پاکستان میں کاروبار ی شراکتیں قائم کرنے کے مواقع تلاش کرنا چاہتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چین کی کمپنیاں پاکستان میں ماحول دوستانہ اور گرین بلڈنگ سمیت سمارٹ ٹاؤرز تعمیر کرنے، جدید زرعی مصنوعات تیار کرنے، سائبر سیکورٹی کو بہتر کرنے، شمسی توانائی پیدا کرنے، ای ایجوکیشنل پلیٹ فارمز قائم کرنے اور ای کامرس سمیت متعدد شعبوں میں پاکستان کی کاروباری برادری کے ساتھ جوائنٹ وینچرز قائم کرسکتی ہیں۔ اس موقع پر چین کی کمپنیوں کے نمائندگان نے تاجر برادری کو اپنی اپنی مصنوعات کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔چین کے وفد سے خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر محمد احمد وحید نے کہا کہ موجودہ دور ڈیجیٹل اکانومی کا دور ہے جس وجہ سے کاروباری شعبے میں تیزی سے تبدیلیاں رونما ہو رہی ہیں۔ لہذا انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ چین کی کمپنیاں ڈیجیٹل کاروبار کے شعبے میں پاکستان کے نجی شعبے کے ساتھ تعاون کریں تا کہ پاکستان جلد ایک ڈیجیٹل اکانومی کے طور پر ابھرے۔ 

انہوں نے کہا کہ چین کے سرمایہ کار ٹیکنالوجی کی منتقلی کر کے دلچسپی کے شعبوں میں پاکستان کے ہم منصبوں کے ساتھ کاروباری شراکتیں قائم کریں اور ویلیو ایڈیڈ مصنوعات تیار کرنے میں پاکستان سے تعاون کریں جس سے پاکستان کی برآمدات میں نمایاں بہتری آئے گی۔انہوں نے اس موقع پر چین کے وفد کو سی پیک سمیت پاکستان کی معیشت کے مختلف شعبوں میں پائے جانے والے سرمایہ کاری کے مواقعوں سے آگاہ کیا اور اس بات پر زور دیا کہ وہ ان مواقعوں سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کریں۔سنیٹر میاں عتیق نے اپنے خطاب میں کہا کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان پاکستان کو ڈیجیٹل اکانومی بنانے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں لہذا چین کی کمپنیاں اس سلسلے میں پاکستان کے ساتھ ہر ممکن تعاون کریں۔ 

انہوں نے کہا کہ پاک چین بزنس کونسل دونوں ممالک کے نجی شعبوں کے درمیان براہ راست روابط کے قیام کیلئے ایک پل کا کردار ادا کرے گی۔اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر طاہر عباسی، نائب صدر سیف الرحمٰن خان، احسن ظفر بختاوری، اسلم کھوکھر، خالد چوہدری اور دیگر نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور پاکستان و چین کے درمیان تجارتی و اقتصادی تعلقات کو مزید مضبوط کرنے کیلئے مختلف تجاویز پیش کیں۔  

مزید : کامرس


loading...