پی سی جی اے‘ کپاس کی فیکٹریوں میں آمد کے اعداد وشمار فائنل

  پی سی جی اے‘ کپاس کی فیکٹریوں میں آمد کے اعداد وشمار فائنل

  



ملتان (نیوز رپورٹر)پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن (پی سی جی اے)نے کپاس کی فیکٹریوں میں آمد کے اعدادو شمار جاری کر دیئے ہیں جسکے مطابق15 دسمبر 2019تک ملک کی جننگ فیکٹریوں میں 78(بقیہ نمبر53صفحہ12پر)

لاکھ61ہزار203گانٹھ کپاس آئی۔15دسمبر 2018تک99لاکھ62ہزار657گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی تھی۔گذشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 21لاکھ1ہزار454گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں کم آئی ہے۔ کمی کی شرح21.09فیصد رہی۔صوبہ پنجاب کی فیکٹریوں میں 44لاکھ67ہزار135گانٹھ کپاس آئی ہے جو گذشتہ سال کی اسی مدت میں فیکٹریوں میں آنے والی فصل 59لاکھ18ہزار023گانٹھ کپاس سے14لاکھ50ہزار888گانٹھ کم ہے۔ پنجاب میں کمی کی شرح24.52فیصد رہی۔صوبہ سندھ کی فیکٹریوں میں 33لاکھ94ہزار068گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی ہے جبکہ گذشتہ سال40لاکھ44ہزار634گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی تھی۔صوبہ سندھ میں کمی کی شرح 16.08فیصد رہی۔15دسمبر2019تک فیکٹریوں میں آنے والی کپاس سے75 لاکھ43ہزار195گانٹھ روئی تیار کی گئی۔ ملک میں 424جننگ فیکٹریاں آپریشنل ہیں۔ ایکسپورٹرز نے رواں سیزن میں 52 ہزار160گانٹھ روئی خرید کی ہے جبکہ ٹیکسٹائل سیکٹرنے65لاکھ36ہزار688گانٹھ روئی خرید کی ہے۔ ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان(TCP)نے کاٹن سیزن 2019-20میں خریداری نہیں کی ہے۔ صوبہ پنجاب میں 320جننگ فیکٹریاں آپریشنل ہیں او ر42لاکھ 73ہزار635گانٹھ روئی تیار کی گئی ہے۔ ضلع ملتان میں 15دسمبر2019تک1لاکھ34ہزار264گانٹھ کپاس، ضلع لودھراں میں 64ہزار230گانٹھ کپاس، ضلع خانیوال میں 3لاکھ47ہزار 507گانٹھ کپاس، ضلع مظفر گڑھ میں 2لاکھ249گانٹھ کپاس، ضلع ڈیرہ غازی خان میں 3لاکھ58ہزار340گانٹھ کپاس،ضلع راجن پور میں 2لاکھ70ہزار606گانٹھ کپاس، ضلع لیہ میں 1لاکھ45 ہزار210 گانٹھ کپاس، ضلع وہاڑی میں 1لاکھ 89ہزار942گانٹھ کپاس، ضلع ساہیوال میں 1لاکھ87 ہزار565گانٹھ کپاس، ضلع رحیم یار خان میں 9لاکھ37ہز ار795گانٹھ کپاس، ضلع بہاولپور میں 5لاکھ38ہزار389گانٹھ کپاس، ضلع بہاولنگر میں 8لاکھ 38ہزار163گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی ہے۔ ضلع سانگھڑمیں 11لاکھ15ہزار 121 گانٹھ کپاس، ضلع میر پور خاص میں 1لاکھ26ہزار815گانٹھ کپاس، ضلع نواب شاہ میں 2لاکھ9ہزار628گانٹھ کپاس، ضلع نو شہرو فیروز میں 3لاکھ3ہزار464 گانٹھ کپاس، ضلع خیر پور میں 2لاکھ74ہزار 237گانٹھ کپاس، ضلع سکھر میں 4لاکھ75ہزار522گانٹھ کپاس، ضلع جام شورومیں 94ہزار740گانٹھ کپاس اور ضلع حیدرآباد میں 2 لاکھ13ہزار799گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی ہے۔ غیر فروخت شدہ سٹاک 12لاکھ72ہزار355 گانٹھ کپاس اور روئی موجود ہے۔

فائنل

مزید : ملتان صفحہ آخر