کرمداد قریشی‘ اندھے قتل کی 2وارداتیں ٹریس‘جلد اہم انکشافات

کرمداد قریشی‘ اندھے قتل کی 2وارداتیں ٹریس‘جلد اہم انکشافات

  



مظفرگڑھ (بیورو رپورٹ) پولیس تھانہ کرمداد قریشی نے 2 اندھے قتل کی وارداتوں کا سراغ لگالیا ہے ،ایک واردات کے ملزمان گرفتار ہوچکے ہیں تفصیل کے مطابق گزشتہ ہفتے تھانہ کرمداد قریشی کی حدود میں 2 اندھے قتل کی الگ الگ وارداتیں ہوئیں،پہلی واردات عجب ارائیں روڈ پر ہوئی (بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

جہاں جیل پولیس کے ریٹائرڈ ملازم اعظم سرانی کو صبح 2 بجے فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا اور جس کا ظاہری طور پر کوئی سراغ نہیں مل رہا تھا جبکہ دودن بعد ہی موضع گل والا میں مظفرگڑھ کے رہائشی کار ڈرائیور آصف دستی کی ٹانگ اور بازو کاٹ کر اسے کار سمیت آگ لگا دی گئی جس سے اس کی نعش جل کر کوئلہ بن گئی،قتل کی پے درپے وارداتوں پر ڈی پی او مظفرگڑھ سید ندیم عباس نے ایس ایچ او تھانہ کرمداد قریشی ملک عمران حمید ماڑھا،اسسٹنٹ سب انسپکٹر حضور بخش بھٹہ،اور مشکل ترین وارداتوں کا سراغ لگانے والے کانسٹیبل سعید احمد سمیجہ کو دونوں وارداتوں کا سراغ لگانے کا خصوصی ٹاسک دیا جوکہ پولیس ٹیم نے چیلنج سمجھ کر کام شروع کیا اور ذرائع کے مطابق 72 گھنٹوں میں ہی آصف دستی کے قتل کے ملزمان کو گرفتار جبکہ اعظم سرانی کے قتل کے ملزمان کو بھی ٹریس کرلیا اور ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں،ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ آصف دستی کے قتل میں مقتول کی اہلیہ شکیلہ بانو ملوث ہے جس نے اپنے آشنا شیر شاہ ملتان کے رہائشی مجاہد کے ساتھ مل کر واردات کی،ذرائع کے مطابق دوران تفتیش ملزمہ نے اقرار جرم بھی کرلیا ہے،اندھے قتل کی وارداتوں کا سراغ لگانے اور ملزمان کی گرفتاری پر مقتول کے ورثاء اور اہل علاقہ نے پولیس ٹیم ملک عمران حمید ماڑھا،حضور بخش بھٹہ اور سعید احمد سمیجہ کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے مبارکباد پیش کی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...