سنگین غداری کافیصلہ بہت کمزور ،اگر چیلنج کیا جائے تو یہ اپ سیٹ ہو سکتی ہے ،جسٹس (ر)شائق عثمانی

سنگین غداری کافیصلہ بہت کمزور ،اگر چیلنج کیا جائے تو یہ اپ سیٹ ہو سکتی ہے ...
سنگین غداری کافیصلہ بہت کمزور ،اگر چیلنج کیا جائے تو یہ اپ سیٹ ہو سکتی ہے ،جسٹس (ر)شائق عثمانی

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)جسٹس (ر)شائق عثمانی نے کہا ہے کہ سنگین غداری میںخصوصی عدالت کافیصلہ بہت کمزور ہے اگر اس کو چیلنج کیا جائے تو یہ اپ سیٹ ہو سکتی ہے خاص طورپرپرویز مشرف خودکسی وکیل کے ذریعے پیروی کریں گے تو یہ ججمنٹ اپ سیٹ ہو سکتی ہے میرے خیال میں یہ ایک عام سا فیصلہ ہے ۔

نجی ٹی وی ہم نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے جسٹس (ر)شائق عثمانی نے کہاکہ سنگین غداری کیس میں کوئی خاص بات نہیں صرف مختلف ایونٹس کا بیانیہ ہے جو کچھ بھی ابھی تک ہوا ہے اوریہ دکھانے کی کوشش کی ہے اورچونکہ پرویز مشرف مفرور ہیں جس کی وجہ سے ان کیخلاف ساری چیزیں قبول کرلی ہیں۔

انہوںنے کہاکہ فیصلے میں کسی قسم کی کوئی بحث نہیں ہے میرے خیال میں یہ بہت کمزور فیصلہ ہے اگر اس کو چیلنج کیا جائے تو یہ اپ سیٹ ہو سکتی ہے خاص طورپرپرویز مشرف خودکسی وکیل کے ذریعے پیروی کریں گے تو یہ ججمنٹ اپ سیٹ ہو سکتی ہے، میرے خیال میں یہ ایک عام سا فیصلہ ہے ۔

جسٹس (ر)شائق عثمانی نے کہاکہ اگرکوئی شخص مر جائے تو کریمنل کیسز ختم ہو جاتے ہیں اوریہ کہناکہ کوئی مرجائے تو اس کی لاش کو گھسیٹ کر لایا جائے یہ تو تعصب والی بات ہے جو کہ صحیح نہیں ہے ،ویسے ہمارے مذہب میں بھی ہے کہ کوئی ڈیڈباڈی کی اس طرح سے بے حرمتی نہیں کرسکتا، میرے خیال میں یہ تو زیادتی کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں اس فیصلے کو چیلنج کرناچاہئے، جب یہ فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج ہوتا ہے تو وہی اس فیصلے کو کالعدم قراردے سکتی ہے اور کوئی طریقہ نہیں سزائیں ختم کرناکا۔

مزید : قومی /علاقائی /سندھ /کراچی