مشرف کیخلاف تفصیلی فیصلہ جاری، پاک فوج کے ترجمان نے وہ کام کرنے کا فیصلہ کرلیا جس کا ہرکسی کو انتظار تھا

مشرف کیخلاف تفصیلی فیصلہ جاری، پاک فوج کے ترجمان نے وہ کام کرنے کا فیصلہ ...
مشرف کیخلاف تفصیلی فیصلہ جاری، پاک فوج کے ترجمان نے وہ کام کرنے کا فیصلہ کرلیا جس کا ہرکسی کو انتظار تھا

  



راولپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن )خصوصی عدالت نے پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیاہے جس میں سزائے موت سنا گئی ہے جبکہ جسٹس سیٹھ وقار نے فیصلے میں لکھا کہ پرویز مشرف اگر پھانسی سے پہلے فوت ہو جاتے ہیں تو ان کی لاش کو ڈی چو ک لایا جائے اور تین روز تک لٹکایا جائے ۔

تفصیلات کے مطابق تفصیلی فیصلہ آنے کے بعد ترجمان پاک فوج ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور  کچھ ہی دیر بعد اہم ترین پریس کانفرنس کرنے جارہے ہیں اور اس حوالے سے تیاریا ں شروع کر دی گئی ہیں ۔ یاد رہے کہ 17 دسمبر کو مختصر فیصلہ آنے کے بعد آئی ایس پی آر کی جانب سے پریس ریلیز جاری کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ خصوصی عدالت کے فیصلے پر افواج پاکستان میں شدید غم و غصہ اور اضطراب پایا جاتاہے ،پرویز مشرف ملک کے صدر ،آرمی چیف اور چیئر مین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی رہ چکے ہیں،ا±نہوں نے چالیس سال ملک کی خدمت کی ہے،پاکستان کے دفاع کے لیے جنگیں لڑی ہیں،وہ کسی صورت بھی غدارنہیں ہوسکتے۔میجر جنرل آصف غفورکاکہناتھاکہ پرویز مشرف کےکیس سےمتعلق خصوصی کورٹ نے قانونی تقاضے پورے نہیں کیے ،کیس کو عجلت میں نمٹا یا گیا۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ جنرل(ر)پرویز مشرف کو اپنے دفاع کا حق نہیں دیا گیا ،عدالتی کارروائی شخصی بنیاد پر کی گئی۔ا±نہوں نے کہا کہ فوج توقع کرتی ہے کہ جنرل(ر)پرویز مشرف کو آئین کے تحت انصاف دیا جائے گا۔

مزید : اہم خبریں /قومی