وفاقی حکومت نے پرویز مشرف کے ٹرائل کے آغاز پر کیا سنگین غلطی کی ؟سابق وزیرقانون نے نشاندہی کردی

وفاقی حکومت نے پرویز مشرف کے ٹرائل کے آغاز پر کیا سنگین غلطی کی ؟سابق ...
وفاقی حکومت نے پرویز مشرف کے ٹرائل کے آغاز پر کیا سنگین غلطی کی ؟سابق وزیرقانون نے نشاندہی کردی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیر قانون علی ظفر نے کہاہے کہ حکومت نے جب سنگین غداری کیس میں پرویز مشرف کا ٹرائل شروع کیا تھاتووہاں سے ہی غلطی کردی تھی ، یہ ایک ایسی غلطی ہے جن نے ٹرائل کاسارا عمل ہی خراب کردیا ہے ۔

جیونیوز کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے علی ظفرنے کہا کہ پرویزمشرف کیخلاف سنگین غداری کیس میں خصوصی عدالت کے فیصلے پر اپیل صرف سپریم کورٹ میں ہی ہوسکتی ہے ، صرف وہاں اس بات پر بحث ہوسکتی ہے کہ خصوصی عدالت نے ہائیکورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی تو نہیں کی ۔

علی ظفر کاکہنا تھاکہ آرٹیکل 6میں ایک شخص کی بات نہیں کی جاتی بلکہ یہ ایک پورے گروپ کی بات کی جاتی ہے ، حکومت نے جب اس کیس کاٹرائل شروع کیا تھا ، وہاں سے ہی غلطی ہوئی تھی ۔ یہ ایسی غلطی ہے جس نے ٹرائل کا ساراعمل ہی خراب کردیا ہے اور یہ فیصلہ نہیں ہوناچاہئے تھا ۔انہوں نے کہااگر اس کیس میں دوسرے لوگوں کوچھوڑ دیا تواس کامطلب ہے کہ آپ کی قانونی کارروائی کی بنیاد ہی غلط تھی ۔

مزید : قومی


loading...