پی پی کے جلسے کے خلاف پی ٹی آئی نے قرارداد جمع کرادی

پی پی کے جلسے کے خلاف پی ٹی آئی نے قرارداد جمع کرادی

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف نے پیپلز پارٹی کی جانب سے لاڑکانہ میں جلسہ کرنے کے خلاف قرارداد سندھ اسمبلی میں جمع کروادی۔ درخواست پی ٹی آئی کے اراکین سندھ اسمبلی خرم شیرزمان، شہزاد قریشی، بلال غفار اور راجہ اظہر نے سیکریٹری سندھ اسمبلی کو جمع کروائی۔ قرارداد میں موقف اختیار کیا گیا کہ سندھ میں کورونا کیسز بڑھ رہے ہیں جلسہ روکا جائے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ صوبے میں کرونا کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔سندھ میں کورونا متاثرین کی شرح ملک بھر میں سب سے زیادہ ہے۔ایک طرف کرونا بڑھ رہا ہے، دکانیں بند کرائی جارہی ہیں تو دوسری طرف جلسے کئے جارہے ہیں۔ جو نالائق اعلیٰ ہاتھ جوڑکر لوگوں کو گھروں میں رہنے کا کہتے تھے وہ آج بھاگ گئے ہیں،وہی صاحب واپس آکر ہاتھ جوڑ کر کہیں گے کہ لاڑکانہ چلو۔پیپلز پارٹی کے رہنما راشد ربانی، مرتضیٰ بلوچ، جام مدد علی کاانتقال بھی کورونا کے باعث ہوا۔ خرم شیر زمان نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت کے قول و فعل میں تضاد ہے۔محترمہ شہید کے بعد اس جماعت کا رخ ملک دشمنی کی طرف ہے۔شہیدبے نظیر کی سوچ پر زرداری گروپ نے قبضہ کرلیا ہے۔آج اگر محترمہ زندہ ہوتی تو ایسا نہیں ہوتا۔سندھ میں طرزحکمرانی کرپشن کی بنیاد پر ہے۔سندھ اسمبلی میں پی پی کے ایک رجیکٹڈ لیڈر نے پریس کانفرنس کی جس میں انہوں نے 27 تاریخ کو لاڑکانہ میں جلسہ کرنے کا اعلان کیا دوسری طرف سندھ حکومت نے کل مدرسوں کو بند کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا۔ پی ڈی ایم نے ملک میں جلسے کرکے کرونا پھیلایا ہے۔ملک میں اسپتال بھر چکے ہیں لیکن پیپلز پارٹی کو لاڑکانہ میں جلسہ ضرور کرنا ہے۔دعا کرنے آنے والے کرونا لیکر جائیں گے۔خرم شیر زمان کا مزید کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کو صرف وزیراعظم کی پالیسیوں سے خوف ہے۔عمران خان کی مقبولیت پوری دنیا میں ہے۔پاکستان معاشی ترقی کی طرف گامزن ہے۔بل گیٹس آج عمران خان کے احساس پروگرام کی تعریف کررہے ہیں۔بلاول کو شرم آنی چاہیے جو جماعت محترمہ کی تصاویر پھینک کر کردار کشی کرتے تھے وہ ان کے ساتھ اسٹیج پر ہونگے۔دوسری طرف وہ مولانا کھڑے ہونگے جو کہتے تھے کہ اسلام میں عورت کی حکمرانی حرام ہے جبکہ وہ خود مریم کے پیچھے ہاتھ باندھ کر کھڑے ہوتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ مریم بلاول سے ضرور پوچھیں کہ ایڈز کے مریض سب سے زیادہ لاڑکانہ میں کیوں ہیں؟ کتے کے کاٹنے کے کیسز لاڑکانہ میں سب سے زیادہ کیوں ہیں؟ سندھ کے لوگ پینے کے صاف پانی سے محروم کیوں ہیں؟پیپلز پارٹی کے وزراء بتائیں صوبے میں کیا تیر مارا؟سپریم کورٹ آج ان سے پوچھ رہا کہ نیب زدہ افسران کہاں ہیں۔پلی بارگین کرنے والے افسران کو پی پی نے سر کا تاج بنایا ہوا ہے۔یہ مال بنائیں گے اور پھر واپس نکل جائیں گے۔اپوزیشن کا مقصد پاکستان کی معیشت کو بٹھانا ہے۔سندھ میں آنے والی حکومت پیپلز پارٹی کی نہیں ہوگی۔

مزید :

صفحہ آخر -