ہائیکورٹ کا مغوی شہری کو بازیاب کرکے اسے عدالت میں پیش کرنیکا حکم 

  ہائیکورٹ کا مغوی شہری کو بازیاب کرکے اسے عدالت میں پیش کرنیکا حکم 

  

پشاور(نیوز رپورٹر) پشاورہائیکورٹ نے ضلع خیبر کے مغوی شہری کو بازیاب کرکے اسے عدالت میں پیش کرنیکا حکم دیتے ہوئے سماعت 12جنوری تک ملتوی کردی۔ قائم مقام چیف جسٹس قیصر رشید خان اور جسٹس سید ارشد پرمشتمل بنچ نے نور محمد کیس پر سماعت کی اس موقع پر ایس ایچ او لنڈی کوتل، ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سکندر حیات شاہ اور مغوی کا بھائی بھی عدالت میں پیش ہوا۔ دوران سماعت قائم مقام چیف جسٹس نے ایس ایچ او سے استفسار کیاکہ عدالت نے ایک ہفتے کا وقت دیا تھا، ایک ہفتے میں آپ لوگوں نے کیا کیا؟ایس ایچ او نے بتایا کہ انہوں نے حال ہی میں چارج لیا ہے۔ اے اے جی نے بتایاکہ سرحدی علاقہ ہے وہاں پولیس کی رسائی مشکل ہے۔ اس موقع پر مغوی کے بھائی نے عدالت کو بتایا کہ بارڈر پر باڑ لگی ہوئی ہے، وہاں سیکورٹی فورسز تعینات ہیں، ہمارا بھائی سرحد پار نہیں،یہاں ہے۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ نور محمد کیساتھ فون پر بات ہوتی ہے،لنڈی کوتل جرگہ نے رابطہ کرکے اغواء کاروں کے مطالبات ماننے کا کہا ہے۔عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر ایس ایچ او کو حکم دیا کہ  درخواست گذار کی نشاندہی پر کارروائی کرکے بندہ بازیاب کریں جبکہ آئندہ سماعت پر مکمل رپورٹ اور مغوی کو عدالت میں پیش کرنیکا حکم دیتے ہوئے سماعت 12 جنوری تک ملتوی کردی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -