سودی نظام کے ہوتے معاشی و سیاسی استحکام ممکن نہیں،اصغر نورانی

   سودی نظام کے ہوتے معاشی و سیاسی استحکام ممکن نہیں،اصغر نورانی

  

لاہور(جنرل رپورٹر)تحریک دعوت حق پاکستان  کے امیر علامہ محمد اصغر نورانی اور علامہ نعیم جاوید نوری سمیت دیگر نے جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب گلشن راوی میں سیرت النبی ؐکے موضوع پرکہا ہے کہ سودی نظام کے ہوتے ہوئے معاشی و سیاسی استحکاممکن نہیں ہے جو صرف اسلام کے معاشی نظام کے نفاذ سے ہی معاشی و سیاسی بحرانوں سے نجات مل سکتی ہے۔ جو شخص قرآ ن مجید کااحترام نہیں کر تا اوربے حرمتی کرتا ہے وہ معا شرے کا نا سور ہے،بعض بد بختو ں نے ہر دور میں قرآ ن مجید کی بے حرمتی کر کے قرآ ن پاک کو دنیا سے ختم کرنے کی کو شش کی چو نکہ قرآ ن مجید کی حفا ظت کاذمہ خود خا لق کائنا ت نے اپنے ذمہ لیا ہوا ہے اس لیے کسی بد بخت کی یہ خواہش پوری نہیں ہو سکی اور نہ ہو سکے گی،حکومت اپنی ذمہ داریاں پوری کرے اور قرآ ن مجید کی بے حرمتی کرنے والو ں کے خلا ف آ ئین اور قانون کے مطا بق انہیں سزادے۔

انہوں نے کہا کہ 73کے آئین کے خلاف ہر سازش ناکام ہوگی، قادیانی اپنی آئینی حیثیت کو تسلیم کر نے کے لیئے تیار ہی نہیں ہیں اور پھر انھیں اداروں میں شامل کر نے کی منطق قوم کی سمجھ سے با لا ہے، آئین پر عمل کر نا اور اسے حقیقی روح کے مطابق نافذ کر نا ہر حکومت کی ذمے داری ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -