لوگوں کو یورپ پہنچانے والے انسانی سمگلروں کی ڈسکاﺅنٹ آفر نے ہنگامہ برپا کردیا

لوگوں کو یورپ پہنچانے والے انسانی سمگلروں کی ڈسکاﺅنٹ آفر نے ہنگامہ برپا ...
لوگوں کو یورپ پہنچانے والے انسانی سمگلروں کی ڈسکاﺅنٹ آفر نے ہنگامہ برپا کردیا
سورس: PxHere

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کرسمس کے موقع پر ہر طرح کی اشیاءپر ڈسکاﺅنٹ دیا جاتا ہے اور آپ کو یہ سن کر شدید حیرت ہو گی کہ اس بار انسانی سمگلروں نے بھی اس تہوار پر حیران کن حد تک ڈسکاﺅنٹ دے ڈالی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق رواں سال جنوری کے مہینے میں برطانوی بارڈر غیرقانونی طور پر پار کروانے کے عوض انسانی سمگلنگ گینگ فی کس 4ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 8لاکھ 66ہزار روپے)سے زائد رقم لیتے تھے تاہم اب یہ ریٹ 500پاﺅنڈ (تقریباً 1لاکھ 8ہزار روپے) سے 1ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 2لاکھ 16ہزار روپے) کے درمیان آ چکا ہے۔

رپورٹ کے مطابق کئی انسانی سمگلنگ گینگز نے تو یہاں تک ڈسکاﺅنٹ دے دیا ہے کہ وہ غیرقانونی طور پر بارڈر عبور کروا کر لوگوں کو برطانیہ میں داخل کروانے کے عوض محض 300پاﺅنڈ (فی کس) لے رہے ہیں۔ یہ قیمت جنوری کے مقابلے میں 10گنا سے بھی کم ہے۔ انسانی سمگلنگ گینگز کے یہ ریٹ اور ڈسکاﺅنٹ کے متعلق انٹیلی جنس نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے اور برطانوی بارڈر فورس اس صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیاری کر رہی ہے۔ سکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ غیرقانونی طور پر بارڈر عبور کرانے پر اس قدر ڈسکاﺅنٹ دیئے جانے پر کرسمس کے دنوں میں غیرقانونی تارکین وطن کے برطانیہ میں داخل ہونے کی شرح میں کئی گنا اضافے کا امکان ہے۔برطانوی سکیورٹی سروسز ان جرائم پیشہ افراد کو انسانی تجارت سے روکنے لیے ہر ممکن اقدامات کر رہی ہیں۔

مزید :

برطانیہ -