بہت جلد فیصل آباد میں ٹیکس محتسب کا سب آفس قائم کر دیا جائیگا

بہت جلد فیصل آباد میں ٹیکس محتسب کا سب آفس قائم کر دیا جائیگا

فیصل آباد (بیورورپورٹ) وفاقی ٹیکس محتسب عبدالرو¿ف چوہدری نے فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ بہت جلد فیصل آباد میں ٹیکس محتسب کا سب آفس قائم کر دیا جائیگا جس سے شکایات کے جلد ازالے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ بلا شبہ تاجروں کوہراساں کرنے سے ان میں پریشانی بڑھتی ہے چنانچہ ٹیکس دہندگان پر مزید بوجھ ڈالنے کی بجائے ایف بی آر امسال ایک لاکھ نئے ٹیکس گزار پیدا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کے خلاف فیصلے پر عملدرآمد کیلئے ٹیکس محتسب کے دفاتر میں عملدرآمدی ڈیسک بھی قائم کئے گئے ہیں۔ ٹیکس محتسب کے پاس سوموٹوکا بھی اختیار موجود ہے جسے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کو ہدایت کی ہے کہ وہ فیصلوں پر غیر ضروری اپیلوں کی بجائے عملدرآمد کرے۔ ٹیکس محتسب کے پاس ہر سماعت پر درخواست گزار کی پیشی ضروری نہیں ہے۔ ریفنڈ کیسز پر فیصلہ کے بعد نئی تشخیص کرنا اور ریفنڈ کو ایڈجسٹ کرنا غیر قانونی ہے۔ ایس آر او کا مقصد قانونی پیچیدگیوں کا خاتمہ ہے اور قوانین میں ترامیم بذریعہ ایوان ہونی چاہیئں جبکہ ریفنڈ کیسز پر فیصلہ کے بعد ان کا جلد اجراءہونا چاہیئے۔ قبل ازیں خطبہ استقبالیہ پیش کرتے ہوئے صدر فیصل آباد چیمبر انجینئر سہیل بن رشید نے کہا کہ بزنس کمیونٹی بجلی و گیس کی لوڈشیڈنگ اور نرخوں میں اضافے کے باعث مہنگی مصنوعات تیار کرنے پر مجبور ہیں ، اسے ریلیف ملنا چاہیئے۔ سیلز ٹیکس ریٹرن میں ترمیم کرکے خریداروں کے شناختی کارڈ کی ڈیمانڈ سراسر غلط اور ناقابل عمل ہے، پیچیدہ ٹیکس ریٹرن کی بجائے اسے آسان بنایا جائے، ٹیکس گزاروں پر مزید بوجھ ڈالنے کی بجائے نیٹ ورک کو بڑھایا جانا چاہیئے۔

 انہوں نے کہا کہ ٹیکس محتسب کے پاس اگر شکایت درج کروائی جائے تو قانونی طور پر اپیل فائل نہ کرنے پر شکایت قابل سماعت ہے اس ضمن میں بھی ابہام دور کیا جائے۔ محکمہ اکثر کیسز میں محکمہ جان بوجھ کر تیاری کرکے نہیں آتا اور مزید تاریخ دینے کا مطالبہ کرتا ہے اس اقدام کا بھی خاتمہ ہونا چاہیئے۔ اس موقع پر وفاقی ٹیکس محتسب کے ایڈوائزرز حاجی احمد ، میاں منورغفور اور عمرفاروق، سابق صدر شیخ عبدالقیوم، حاجی محمد عابد، چوہدری طلعت محمود ، شیخ محمد بشیر، سینئر نائب صدر ایوان ریاض الحق، نائب صدر ایوان چوہدری محمد اصغر ، شیخ مختار ، طارق اسماعیل، محمد طلحہ ، ثناءاللہ نیازی اور رانا سکندر اعظم نے بھی اظہار خیال کیا۔

مزید : کامرس