کاروباری ہفتے کے دوسرے روز بھی مندے کے بادل چھائے رہے

کاروباری ہفتے کے دوسرے روز بھی مندے کے بادل چھائے رہے

کراچی(اکنامک رپورٹر)کراچی اسٹاک ایکسچینج میں کاروباری ہفتے کے دوسرے روز بھی مندی کے بادل چھائے رہے اور کے ایس ای 100انڈیکس 26000اور 25900کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا ۔سرمایہ کاری مالیت میں 27ارب 26کروڑ روپے سے زائد کی کمی ،کاروباری حجم گزشتہ روز کی نسبت29.21فیصد زائد جبکہ57.21فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی ۔ حکومتی مالیاتی اداروں ،مقامی بروکریج ہاو¿سز سمیت دیگر انسٹی ٹیوشنز کی جانب سے سیمنٹ ،آئل اوربینکنگ سیکٹر میںخریداری کے باعث کاروبار کا آغاز65پوائنٹس کے اضافے سے ہوا ۔ ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 26068پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی ریکارڈ کیا گیا تاہم فروخت کے دباو¿ اور پرافٹ ٹیکنگ کے باعث مقامی سرمایہ کار گروپوں نے اپنے حصص فروخت کرنے کو ترجیح دی، جس کے نتیجے میں تیزی کے اثرات زائل ہوگئے اور کے ایس ای 100انڈیکس 25573پوائنٹس کی نچلی سطح پر بھی ریکارڈ کیا گیا ۔ماہرین اسٹاک کا کہنا تھا کہ گزشتہ چند ماہ سے ملک بھر میں دہشت گردانہ کاروائیاں بڑھنے اور امن وامان کی بدترین صورتحال کے علاوہ سیاسی افق پر غیریقینی حالات جیسے عوامل سرمایہ کاروں کی مایوسی میں اضافہ کررہے ہیں جسکے سبب سرمایہ کاروں کی جانب سے نئے تقویمی سال کے آغاز پر تاحال طویل المدت سرمایہ کاری کی حکمت عملی کا فقدان نظر آرہا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اسٹاک مارکیٹ کے دوبڑے پلیرز کی باہمی چپقلش بھی کیپیٹل مارکیٹ کی سرگرمیوں کو متاثر کررہی ہیں یہی وجہ ہے کہ مارکیٹ کی کوئی واضح ڈائریکشن نظر نہیں آرہا ہے، صرف وقتی بنیادوں پر اتارچڑھاﺅ کا رحجان غالب ہے۔مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100انڈیکس 119.51پوائنٹس کمی سے 25884.38پوائنٹس پر بند ہوا ۔مجموعی طور پر 388کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا ،جن میں سے 152کے کمپنیوں کے بھاو¿ میں اضافہ ،222کمپنیوں کے بھاو¿ میں کمی جبکہ 14کمپنیوں کے حصص میں استحکام رہا ۔سرمایہ کاری مالیت میں27ارب 26کروڑ 76لاکھ 75ہزار835روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر62کھرب90ارب 65کروڑ 60لاکھ 41ہزار 179روپے ہوگئی ۔

منگل کو کاروباری سرگرمیاں 22کروڑ 50لاکھ 55ہزار 980شیئرز رہیں جو پیر کے مقابلے میں5کروڑ8لاکھ 87 ہزار130شیئرز زائدہیں ۔قیمتوں کے اتار چڑھاو¿ کے حساب سے باٹا پاک لمیٹڈ کے حصص سرفہرست رہے ،جس کے حصص کی قیمت86.66روپے اضافے 3086.66روپے،کولگیٹ پامولو کے حصص کی قیمت 41.00روپے اضافے 1600.00روپے پر بند ہوئی ،نمایاں کمی رفحان میظ کے حصص میں ریکارڈ کی گئی جس کے حصص کی قیمت 310.00روپے کمی سے 7490.00روپے جبکہ نیسلے پاک کے حصص کی قیمت 115.50روپے کمی سے 9334.50روپے پر بند ہوئی ۔منگل کو فوجی سیمنٹ کی سرگرمیاںایک کروڑ88لاکھ 45ہزار شیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں جس کے شیئرز کی قیمت 31پیسے اضافے سے15.94روپے اور لافریج پاک کی سرگرمیاں ایک کروڑ 71لاکھ 30ہزار500 شیئرز کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہیں جس کے شیئرز کی قیمت 53پیسے اضافے سے 10.54روپے ہوگئی ۔کے ایس ای 30انڈیکس 59.14پوائنٹس کمی 18849.50پوائنٹس ،کے ایم آئی 30انڈیکس 206.86پوائنٹس کمی سے 42887.69جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 83.65پوائنٹس کمی 19298.85پوائنٹس پر بند ہوا ۔

مزید : کامرس