ایم کیوایم نے پاکستان میں ایمرجنسی کے نفاذ کا مطالبہ کردیا، تہمینہ دولتانہ اور یوسف تالپور سے نبیل گبول کی جھڑپ

ایم کیوایم نے پاکستان میں ایمرجنسی کے نفاذ کا مطالبہ کردیا، تہمینہ دولتانہ ...
 ایم کیوایم نے پاکستان میں ایمرجنسی کے نفاذ کا مطالبہ کردیا، تہمینہ دولتانہ اور یوسف تالپور سے نبیل گبول کی جھڑپ

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ(ایم کیوایم) نے ملک میں ایمرجنسی کے نفاذ کا مطالبہ کردیا تاہم قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے نبیل گبول کا مطالبہ مستردکردیا اوراراکین کی جانب سے مخالفت کے باعث اُنہیں مذاکرات کے خلاف قرارداد پیش کرنے کی اجازت بھی نہ مل سکی۔چیئرمین رانا شمیم کی زیرصدارت ہونیوالے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے اجلاس میں ایف سی اور پولیس اہلکاروں کی شہادت کی مذمت کی گئی اور شہداءکے لواحقین سے اظہاریکجہتی کیاگیا۔ اجلاس میں ملکی صورتحال پر بحث کے دوران ایم کیوایم کے رکن نبیل گبول نے ملک میں ایمرجنسی کے نفاذ کا مطالبہ کردیا اور کہاکہ ان حالت میں طالبان سے مذاکرات کا سوال ہی پیدانہیں ہوتا،ملک حالت جنگ میں ہے ، طالبان سے مذاکرات کرانیوالے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں ،صدرمملک آئین کے آرٹیکل 232کے تحت ایمرجنسی نافذ کریںجس پر ن لیگ کی تہمینہ دولتانہ نے کہاکہ ایم کیوایم ذاتی مفاد کے لیے ایمرجنسی کی بات کرتے ہیں ، آپ کے لیڈر تو باہر بیٹھے ہیں،آپ نے بھی اپنے مفادات کی خطر پارٹی بدلی۔ نبیل گبول کاکہناتھاکہ آپ ذاتی نوعیت کے حملے نہ کریں ،آپ کا لیڈر پیپرپردستخط کرکے ملک سے باہر چلاگیا۔تہمینہ دولتانہ کاکہناتھاکہ آپ کے لیڈر تو باہر بیٹھے ہیں ، مارشل لاءکی جانب جانے کی بجائے نظام کو مضبوط بناناچاہیے ،بطوررکن پارلیمنٹ نظام کو کمزور نہیں کرناچاہیے ۔نبیل گبول کاکہناتھاکہ مشرف والی ایمرجنسی نہیں چاہتے ، سیکیورٹی صورتحال کی بہتری کے خواہشمند ہیںاور مذاکرات نہ کرنے کے لیے قرارداد پیش کرنے کی کوشش کی اور کہاکہ قائمہ کمیٹی بھی مذمتی قرارداد منظور کرے لیکن ارکان کی جانب سے مخالفت کی وجہ سے نبیل گبول کو قرارداد پیش کرنے کی اجازت نہ مل سکی ۔ پیپلزپارٹی اور جے یو آئی ف کی ایمرجنسی کی مخالفت کی اور پیپلزپارٹی کے یوسف تالپورکی بھی نبیل گبول سے جھڑپ ہوئی۔ کمیٹی کے چیئرمین رانا شمیم نے کہاکہ ملک میں ایمرجنسی یا مارشل لاءکی کوئی ضرورت نہیں ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں