کشمیری قیدیوں سے نا روا سلوک کیا جا رہا ہے ‘تحریک حریت

کشمیری قیدیوں سے نا روا سلوک کیا جا رہا ہے ‘تحریک حریت

  

سری نگر(کے پی آئی)تحریک حریت نے جیلوں میں نظربند حریت پسند جوانوں کو فرضی کیسوں میں الجھائے رکھنے اور ان کی قید کو طول دینے کی کارروائیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ بیان میں کہا گیاکہ بھارت سرکار، جموں وکشمیر کی حکومتیں اور پولیس ہمارے لوگوں سے انتقام لے رہی ہے اور انصاف کے تقاضوں کو پورا نہیں کیا جارہا ہے۔ بیان میں کہاگیا کہ سرکار اور پولیس پوری قوم کو جیلوں میں دیکھنا چاہتی ہے اور گرفتار شدگان کی رہائی میں سرکار اور پولیس کی طرف سے روڑے اٹکائے جارہے ہیں۔

بیان کے مطابق تحریک حریت نے 4سال سے جیل میں بند سید مختار حسین ولد مرحوم سید محمد حسین کی اسیری کو طول دینے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ موصوف انتہائی علیل ہیں، شوگر کے مریض ہونے کے ساتھ ساتھ ان کے دانتوں میں بھی درد ہے، ان کی رہائی میں بھی پولیس رکاوٹ بنی ہوئی ہے، جبکہ تباہ کن سیلاب کے وقت ان کی رہائی ممکن ہوئی تھی، مگر پولیس نے مخالفانہ رپورٹ پیش کرکے اس کی رہائی روک دی تھی۔بیان میں کہاگیاکہ اسی طرح محمد یاسین ایتو، محمد یوسف ڈار، منظور احمد خان، عمر شعبان اور منظور احمد وانی بھی طویل عرصے سے بند ہیں ،تمام اسیروں کی رہائی کا مطالبہ کرتی ہے۔ تحریک حریت کے مرکزی ذمہ داران عبدالحمید ماگرے اور محمد سعید پر مشتمل وفد نے منڈی سوپور کے عبدالسلام ہمدانی کی وفات پر لواحقین کے ساتھ اظہارِ تعزیت کی۔

مزید :

عالمی منظر -