مزاحمتی تدابیر سے استعماری قوتوں کیخلاف لڑنا لازم ہے ‘ اعظم انقلابی

مزاحمتی تدابیر سے استعماری قوتوں کیخلاف لڑنا لازم ہے ‘ اعظم انقلابی

  

 سری نگر(کے پی آئی)محاذ آزدی سر پرست اعظم انقلابی نے کہا ہے کہ ملت اسلامیہ کے علما،سیاسی رہنماوں اور دانشوروں پر لازم ہے کہ وہ متحدہ اور منظم ہو کر ہمہ گیر دعوتی تحریک اور مزاحمتی تدابیر سے یورش طاغوت کا سدباب کریں اور مغربی طاقتوں کو کشمیر اور فلسطین جیسے مسائل کے فوری تصفیہ کی ضرورت کا احساس دلائیں۔ اعظم انقلابی نے شہید غلام محمد بلا کو محبت اور احترام کے جذبات سے یاد کرتے ہوئے کہا کہ حق خود ارادیت کے شیدائی اور فدائی نے 1975 میں اندر ا۔عبداللہ ایکارڈ کے خلاف غم و غصہ کا اظہار کرنے کیلئے احتجاج کا راستہ اختیار کیااور انہیں ان کی حق پسندی کیلئے عتاب اور عذاب کا نشانہ بنایا ، یوں وہ 15 فروری1975 کو پولیس حراست میں شہید ہوئے ۔ انہوں نے کہاکہ استعماری قوتوں نے اپنی چود ھراہٹ (Hegemony) کے دوام کیلئے افراد اور اقوام کو قربانی کا بکرا (Scapegoat) بنا دیا ہے۔انقلابی نے کہاکہ بھارتی حکمرانوں کو یہ بات سمجھنے کی کوشش کرنی چاہئے ، کشمیر کی سیاسی مزاحمتی تحریک سے وابستہ تنظیموں اور انجمنوں کے قائدین کیpacifistحکمت عملی کی وجہ سے ہی یہاں حالات قابو میں رہتے ہیں اور سید صلاح الدین بھی ان مزاحمتی رہنماوں کی فہم و فراست پر مبنی حکمت عملی کی قدرو قیمت سمجھتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم یہ بات سمجھنے سے قاصر ہیں کہ بطل حریت محمد مقبول بٹ شہید کے چھوٹے بھائی ظہور احمد بٹ کو جیل میں کیوں تڑپایا جارہا ہے ، حالانکہ وہ لبریشن فرنٹ کے ذمہ دار رہنماوں کی صف سے تعلق رکھتے ہیں اور حصول آزادی کیلئے سیاسی مزاحمتی تحریک کو ہی موثر ذریعہ سمجھتے ہیں، ظہوربٹ کے 4بھائی پہلے ہی عدم آباد پہنچے ہیں۔ انقلابی نے 22برسوں سے بند ڈاکٹر قاسم کے علاوہ شفیع شریعتی، مسرت عالم، ظہور احمد بٹ،شوکت بخشی سمیت سبھی نظر بندوں کو جیلوں سے رہا کیا جائے ، کالے قوانین منسوخ کئے جائیں اور کشمیر سے فوجی انخلاکیلئے پاکستان کو اعتماد میں لیا جائے۔انقلابی نے کہاکہ ظلم اور جبر و اتبداد کے ماحول میں مراعات پر مرنا شہداکے مقدس خون سے غداری کرنے کے مترادف بات ہوگی ۔

مزید :

عالمی منظر -